پاکستانتازہ ترین

حکومت نے رینٹل پاورفیصلےکے خلاف نظرثانی کی اپیل دائرکردی

اسلام آباد ﴿بیورو رپورٹ﴾ حکومت نے رینٹل پاور کیس کے فیصلے کے خلاف نظر ثانی کی درخواست دائر کرتے ہوئے موقف اختیار کیا ہے کہ عدالت رینٹل پاور منصوبوں کے حوالے سے اپنے 30 مارچ کے فیصلے پر نظر ثانی کرے کیونکہ عدالت نے فیصلہ مسخ شدہ ریکارڈ پر دیا اور علاوہ ازیں فریقین کی جانب سے بھی عدالت میں غلط بیانی سے کام لیا گیا اور فیصلہ بھی خلاف قانون ہے اور آئین کی مختلف شقوں سے متصادم ہے بدھ کے روز حکومت کی جانب سے خواجہ طارق رحیم نے ایڈووکیٹ آن دی ریکارڈ سید ظفر عباس نقوی کے توسط سے نظر ثانی کی درخواست دائر کی 20 صفحات پر مشتمل اس درخواست میں عدالتی فیصلے کے مختلف پیراگراف کا حوالہ دیتے ہوئے کہا گیا ہے کہ اس فیصلے میں حقائق کو بالائے طاق رکھ کر محض مسخ شدہ اور غلط بیانی پرمبنی معلومات پر اکتفا کیا گیا اور انہیں غلط معلومات کو بنیاد بنا کر عدالت نے فیصلہ دیا جس سے نہ صرف بنیادی انسانی حقوق متاثر ہوئے ہیں بلکہ یہ فیصلہ آئین کے چند آرٹیکلز سے متصادم ہے عدالت سے استدعا کی جاتی ہے کہ وہ اپنے فیصلے پر نہ صرف نظر ثانی کرے بلکہ حقائق پر مبنی ریکارد کا جائزہ لینے کے بعد کوئی فیصلہ جاری کرے درخواست میں کہا گیا ہے کہ عدالت عظمیٰ کے فیصلے کا پیراگراف نمبر 10 آئین کے آرٹیکل 24 سے متصادم ہے جو کہ آئینی طور پر درست نہیں مزید کہا گیا ہے کہ پیرا نمبر 11 میں بھی عدالت نے پیداواری صلاحیت بارے حقائق کی بجائے مفروضوں سے کام لیا ہے اور عدالت سے کی گئی غلط بیانی کو ہی عدالت نے بنیاد بنا کر جو رائے دی ہے وہ بھی درست نہیں جبکہ عدالتی فیصلے کے پیراگراف نمبر 12 میں بھی حقائق غلط بیان کئے گئے ہیں جو حقائق دیے گئے ہیں سرے سے ان کا وجود ہی نہیں اورمحض مفروضوں پر عدالت نے فیصلہ دیا جو آئینی و قانونی طور پر درست نہیں انصاف کے تقاضوں کو پورا کرنے کیلئے عدالت کو چاہئے تھا کہ وہ اصل حقائق کو مدنظر رکھ کر فیصلہ دیتی عدالت سے استدعا کی گئی ہے کہ نامزد ملزمان کے خلاف بھی عدالت نے جو کارروائی کا حکم دیا ہے وہ خلاف آئین ہے کیونکہ اس سے ان کا بنیادی حق متاثر ہوا ہے جو کہ آئین کے آرٹیکل 10-A کی صریحاً خلاف ورزی ہے اور اس سے انصاف کے تقاضے مجروح ہوئے ہیں جبکہ عدالت نے جو اپنی آبزرویشنز دی ہیں وہ بھی درست نہیں لہذا عدالت سے استدعا کی ہے کہ مسخ شدہ حقائق کی بجائے اصل حقائق کو مدنظر رکھ کر اس فیصلے پر نظر ثانی کی جائے۔

یہ بھی پڑھیں  وزیراعلیٰ عثمان بزدار سے کوکا کولا کے پاکستان و افغانستان کے نائب صدر فہد اشرف کی ملاقات،37 وینٹی لیٹرز کا عطیہ دیا

یہ بھی پڑھیے :

Back to top button

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker