تازہ ترینکالممحمد عمران فاروق

دانیال عزیز سے ایک گزارش

imran farooqچوہدری انور عزیز مرحوم پاکستانی سیاست کا بڑا نام تھا ۔ آپ مرنجانِ مرنج شخصیت کے مالک تھے ۔ جب کسی سیاسی محفل میں شریک ہوتے تو شمع محفل بن جاتے ۔ ہر خاص و عام پروانہ کیطرح ان کے گردمنڈلاتا اور اُنکی گفتگو سے لطف اُٹھاتا ۔ آپ سیاسی داؤ پیچ سے بخوبی واقف تھے ۔ اور پاکستانی سیاست کے نشیب و فراز کے امین تھے ۔ کلیدی حکومتی عہدوں پر فائز رہے اور جوڑ توڑ کے ماہر سمجھے جاتے تھے ۔ سیاسی زندگی کا بیشتر حصہ پیپلز پارٹی سے وابستہ رہے لیکن دیگر سیاسی خانوادوں سے بھی دیرینہ تعلق قائم رکھا ۔ دانیال عزیز چوہدری انور عزیز کے سیاسی وارث ہیں ۔ آپ بیرون ملک سے اعلیٰ تعلیم یافتہ ہیں ۔ دانیال عزیز جنرل پرویز مشرف کے دور میں سیاسی افق پر نمودار ہوئے ۔ گو کہ آپکے تخلیق کردہ بلدیاتی نظام میں کافی تبدیلیاں رو نما ہو چکی ہیں لیکن وجۂ شہرت آج بھی بلدیاتی نظام ہی ہے۔ مشرف دور میں مسلم لیگ (ق) میں شامل تھے وفاقی وزیر کے درجہ پر فائز رہے ۔ حکومتی ایوانوں سے مسلم لیگ (ق) کی بے دخلی کے بعد آپ بھی ماروی میمن ، زاہد حامد وغیرہ کی طرح مسلم لیگ (ن) میں شامل ہوگئے ۔ آجکل رکن قومی اسمبلی ہیں ۔
مسلم لیگ (ن) کی قیادت نے اُنہیں پاکستان تحریکِ انصاف اور اُسکے چیئر مین کی بیخ کنی پر مامور کیا ہوا ہے ۔ جونہی عمران خان کو ئی پریس کانفرنس کرتے ہیں یا پریس ریلیز جاری کرتے ہیں تو دانیال عزیز فوراً ٹی وی چینلز پر آدھمکتے ہیں ۔ پی ۔ٹی ۔آئی اور عمران خان کو ترکی بہ ترکی جواب دینا اپنا اولین فرض سمجھتے ہیں ۔ دانیال عزیز سے گزارش ہے کہ مہربانی فرما کر پی ۔ٹی۔آئی اور اُسکے سربراہ کے خلاف گفتگو کے دوران اپنے جذبات اور بلڈ پریشر کو قابو میں رکھا کریں ۔ آپ کا لب و لہجہ انتہائی جارحانہ ہو جاتا ہے ۔ حالانکہ آپکا خاندانی وقار آپکو اس اندازِ گفتگو کی اجازت نہیں دیتا ۔ آپکا ماضی بھی گواہی دیتا ہے کہ مسلم لیگ (ن) آپکی آخری منزل نہیں ۔ ایسا نہ ہو کہ حالات کی ستم ظریفی آپکو پی ۔ٹی ۔آئی کیطرف لے جائے ۔ اُس وقت آپ کے لیے بہت مشکل ہو گی ۔ میرے نزدیک میاں برداران نے انتہائی چالاکی سے کام لیتے ہوئے تحریکِ انصاف کی خبر لینے کی ذمہ داری دانیال عزیز کو سونپی ہے ۔ اُنہیں علم ہے کہ چوہدری دانیال عزیز کی طبیعت میں ٹھہراؤ نہیں ہے ۔ حالات کی نزاکت کو سمجھتے ہوئے دانیال عزیز کسی بھی وقت مسلم لیگ (ن) کو داغِ مفارقت دے سکتے ہیں ۔ اِسی لیے اُنکو بند گلی میں دھکیلا گیا ہے ۔
کرپشن کے خلاف آپریشن سندھ سے پنجاب کی طرف بڑھ رہا ہے ۔ میگا سکینڈلز کی فہرست نیب (NAB) کیطرف سے سپریم کورٹ میں جمع کروا دی گئی ہے ۔ افواہیں گردش کر رہی ہیں کہ نندی پور پاور پرا جیکٹ ، ایل ۔این،۔جی کے سودے ، KASB بینک کا انضمام ،بہالپور سولر پاور پراجیکٹ ، منڈا ڈیم اور دیگر پاور پراجیکٹس تحقیقات کی زد میں ہیں ۔ حالات نازک رُخ اختیار کر سکتے ہیں ۔ اِس وقت عملی طور پر ملک کی باگ ڈور جنرل راحیل شریف کے ہاتھو ں میں ہے ۔ نواز شریف چاہتے ہوئے بھی کچھ نہیں کر سکتے ۔ آنے والے دوسے تین ماہ انتہائی اہم ہیں ۔ سیاسی منظر نامہ تیزی سے تبدیل ہوتا نظر آرہا ہے ۔ ایس صورتحال چوہدری دانیال عزیز جیسے سیاسی پنچھیوں کیلئے نئی منزل کا پیغام لے کر آتی ہے۔ لہذا گزارش ہے حضو ر ’’ہاتھ ہولا ‘‘ رکھیں ۔ وگرنہ منہ چھپانا بھی مشکل ہو جائے گا ۔

یہ بھی پڑھیں  پہنچی وہیں پہ خاک جہاں کا خمیر تھا

note

یہ بھی پڑھیے :

Back to top button

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker