شہ سرخیاں
بنیادی صفحہ / تازہ ترین / ساہیوال شجاع ٹاؤن سکینڈل ،شہریوں کی رقم خورد برد کر نے پر نیب کے ہاتھوں گرفتار

ساہیوال شجاع ٹاؤن سکینڈل ،شہریوں کی رقم خورد برد کر نے پر نیب کے ہاتھوں گرفتار

ساہیوال( بیو رو رپورٹ) ساہیوال شجاع ٹاؤن سکینڈل ،شہریوں کی رقم خورد برد کر نے پر نیب کے ہاتھوں گرفتار ہو نے والا ٹاؤن مالک سابق آئی جی سندھ اور نو منتخب سینٹر کا برادر نسبتی نکلا،سابق آئی جی کی اہلیہ بھی ٹاؤن میں حصہ دار ۔تفصیلات کے مطابق پاکپتن روڈ پر واقع ایک نجی کا لونی شجاع ٹاؤن میں شہریوں کے کروڑوں رو پے خورد برد کر لئے گئے تھے اور ٹاؤن انتظامیہ نے بغیر منظوری و نقشہ پاس کے پلاٹوں کی بکنگ کی تھی اور منیجر و دیگر عملہ نے ایک پلاٹ کئی شہریوں کو بیچ کر پیسے ملی بھگت کر کے خورد برد کر لئے تھے جس پر کا لونی مالکان کی جانب سے منیجر چوہدری نیاز کو گرفتار کروا کر11مقدمات درج کروا ئے گئے تھے جو کہ تا حال جیل میں ہے ٹاؤن الاٹیوں حنیف ،رضوان ،اقرار ،حاجی لطیف ،حاجی امجد ،اظہر جمیل ،عمران وغیرہ کے مطابق منیجر اور کا لونی مالکان نے ہی ہم سے پیسے وصول کئے ہیں اور جب انتقال و رجسٹری کروا نے کا ٹائم آیا تو کا لونی مالکان نے یہ کہہ کر جان چھڑ ا لی کہ آپ لوگو ں کی رقم منیجر نے خورد برد کر لی ہے ہمیں کچھ نہیں ملا اس وجہ سے آپ کو مالکی حقوق نہیں دے سکتے اور ہمیں مطمئن کر نے کے لئے ملبہ منیجرچوہدری نیاز پر ڈالا گیا ہے جبکہ چوہدری نیاز کے بھائی ذوالکیف کے مطابق ٹاؤن کے پلاٹوں کی رقوم مالکان کو دی جا تی رہی ہیں ٹاؤن کے درجنوں الاٹیوں نے اپنی جمع پو نجی لٹنے کے بعد متعدد بار احتجاج بھی کیا تھا اور چئیر مین نیب کو تحریری درخواست بھی دی جس پر چند روز قبل نیب نے کاروائی کر تے ہو ئے ٹاؤن کے مالک سابق آئی جی سندھ اور نو منتخب سینیٹر را نا مقبول کے برادر نسبتی سردار زاہد شجاع کو ساہیوال سے گرفتار کر لیا تھا ٹا ؤن الاٹیوں نے بتا یا ہے کہ سابق آئی جی سندھ اور نو منتخب سینیٹر را نا مقبول کی اہلیہ فریدہ بیگم بھی ٹاؤن میں اپنے بھائی زاہد شجاع کے ساتھ حصے دار ہے ۔

یہ بھی پڑھیں  کالم نگارمعاشرے میں پھیلی ہوئی برائیوں کی نشاندہی اپنے قلم کے ذریعے کریں:ایم اے تبسم