تازہ ترینعلاقائی

ساہیوال: پولیس کانسٹیبلان کی بھرتی ،حتمی لسٹ آویزاں ہونے سے قبل بڑے پیمانے پر کرپشن کا انکشاف

ساہیوال(بیو رو رپورٹ)پو لیس کانسٹیبلان کی بھرتی ،حتمی لسٹ آویزاں ہو نے سے قبل بڑے پیمانے پر کرپشن کا انکشاف ، ڈی پی او آفس کے عملہ اور پٹرولنگ پو لیس کے اے ایس آئی نے امیدواروں سے بھرتی کروا نے کا کہہ کر لاکھوں رو پے بٹور لئے،پو لیس کی معاملہ کو دبانے کی بھر پور کوشش ۔تفصیلات کے مطابق پاکپتن میں195کانسٹیبلان کی بھرتی ہوئی اور بھرتی کا پراسس مکمل ہو نے کے بعد حتمی لسٹ بن گئی جسے ڈی پی او آفس پاکپتن کے عملہ اور پٹرولنگ پو لیس کے اے ایس آئی حامد ریاض نے ملی بھگت سے مبینہ خفیہ طور پر لسٹ حاصل کر لی اور کامیاب ہو نے والے امیدواروں کو جھانسہ دیا کہ آپ کو ہم بھرتی کروا دیتے ہیں ذرائع سے معلوم ہوا ہے کہ ملازمین نے فی کس سے 2لاکھ رو پے تک رقم وصول کی ذرائع نے یہ بھی بتا یا کہ پو لیس معاملہ کو دبانے کی بھر پور کوشش کر رہی ہے بھرتی کمیٹی کے چئیر مین آر پی او ساہیوال طارق رستم چوہان، سیکرٹری ڈی پی او پاکپتن ملک کامران یوسف اور ممبرایس ایس پی انٹیلی جنس سید حماد عابد ہیں بھرتی کی حتمی لسٹ پر تاحال صرف ڈی پی او پاکپتن کے دستخط ہیں جبکہ دیگر دو افسران کے دستخط موجود نہ ہیں ذرائع سے معلوم ہوا ہے کہ اے ایس آئی اور ڈی پی او آفس کے دو اہلکاروں کو حراست میں لینے کے بعد چھوڑ ددیا گیا ہے ذرائع نے بتا یا ہے کہ پو لیس کے اعلیٰ حکام واقعہ کو دبا نے کی اس لئے بھی کوشش کر رہے ہیں کہ محکمہ کو بدنامی سے بچایا جا سکے اور معاملہ ٹھپ ہو جا ئے اس بارے کمیٹی کے سیکرٹری ڈی پی او پاکپتن ملک کامران یوسف کا کہناہے کہ تمام تر حقائق ایک دن میں سامنے آ جائیں گے جس کے بعد تفصیلات بتائی جائیں گی مگر دو دن گزرنے کے بعد بھی ان کی طرف سے ابھی تک کوئی بیان جاری نہیں کیا گیا ۔

یہ بھی پڑھیے :

Back to top button
Close

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker