پاکستانتازہ ترین

وفاقی وزیرریلوے خواجہ سعد رفیق نے ساہیوال ریلوے اسٹیشن کی تعمیر نو کا سنگ بنیاد رکھا

ساہیوال (بیورو رپورٹ )وفاقی وزیر ریلوے خواجہ سعد رفیق نے ساہیوال ریلوے اسٹیشن کی تعمیر نو کا سنگ بنیادرکھا۔ ساہیوال ریلوے اسٹیشن کی تعمیر پر 21 کروڑ روپے لاگت ریلوے اسٹیشن کی ایک سو سال سے پرانی عمارت کو منہدم کر کے نئی عمارت تعمیرریلوے اسٹیشنز کی تعمیر نو کے سلسلے میں ملک بھر کے 11 ریلوے اسٹیشز کی تعمیر نو کی جا رہی ہے جن میں پہلے نمبر پر خانیوال، دوسرے نمبر پر اوکاڑا اور تیسرے نمبر پر ساہیوال ریلوے اسٹیشن شامل ہے ڈاکٹر محمد متین احمد صمدانی کی رپورٹ کے مطابق وفاقی وزیر ریلوے خواجہ سعد رفیق نے ساہیوال ریلوے اسٹیشن کی تعمیر نو کا سنگ بنیادرکھیملک بھر کے 11 ریلوے اسٹیشز کی تعمیر نو کی جا رہی ہے خانیوال، دوسرے نمبر پر اوکاڑا اور تیسرے نمبر پر ساہیوال ریلوے اسٹیشن شامل ہیخواجہ سعد رفیق نے بتایا کہ ساہیوال ریلوے اسٹیشن کی تعمیر پر 21 کروڑ روپے لاگت آئے گی اور اس کی تکمیل 18 ماہ کی قلیل مدت میں ہو گیاس موقعے پر صوبائی وزیر ملک ندیم کامران نے وزیر ریلوے خواجہ سعد رفیق سے ساہیوال میں موسی پاک، ملتان ایکسپریس اور بزنس ٹرین کے سٹاپ دینے، پہلے سے سٹاپ کرنے والی ٹرینوں کے ساہیوال سٹاپ پر دورانیہ بڑھانے، ریلوے پھاٹک کھولنے، پانچ مقامات پر انڈر پاس بنوانے اور سیوریج لائن گزارنے کے لیے این او سی کا مطالبہ کیاسعد رفیق نے ان مطالبات میں سے موسی پاک کا سٹاپ دینے سے معذرت کی جبکہ ملتان ایکسپریس اور بزنس ٹرین کے سٹاپ ساہیوال کو دینے کا وعدہ کیاانہوں نے ریلویز کی انتظامیہ سے مشاورت کے بعد سٹاپ کا دورانیہ بڑھانے کا بھی عندیہ دیا ریلوے اسٹیشن کی نئی عمارت کی تعمیر کے بعد یہاں سے ٹرینیں 160 کلومیٹر کی رفتار سے سفر کریں گی جس سے ساہیوال سے لاہور اور ملتان کا سفر محض ڈیڑھ گھنٹے کا رہ جائے گاانہوں نے بتایا کہ جب انہیں ریلویز کا چارج دیا گیا اس وقت ریلویز کی کل سالانہ آمدن 18 ارب روپے تھی جب کہ اس سال ریلویز کی آمدن 35 ارب روپے سے تجاوز کر جائے گی اس موقعے پر ایم این اے عمران احمد شاہ، چودھری اشرف، ایم پی اے ملک ارشد، خضر حیات شاہ کھگہ، آئی زیڈ بھٹی اور راؤ نذر فرید سمیت چیئرمین اور کونسلر سمیت ورکرز کی بڑی تعداد موجود تھی

یہ بھی پڑھیں  بلاول ہاوٴس کے قریب تحریک انصاف اور پی پی کے کارکنوں میں تصادم

یہ بھی پڑھیے :

Back to top button

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker