علاقائی

سیالکوٹ:ہر ذی الشعور انسان سوچتا اورچاہتا ہے کہ امن قائم ہو، نیلسن عظیم

سیالکوٹ:﴿بیورورپورٹ﴾ممبر قومی اسمبلی ڈاکٹر نیلسن عظیم نے کہا ہے ہر ذی الشعور انسان سوچتا اورچاہتا ہے کہ امن قائم ہو مگر امن قائم کرنے کے لئے کوششیں کوئی نہیں کرتاامن تب خراب ہوتا ہے جب عدم برداشت اورمفادات ذاتی ترجیحات بن جاتی ہیںان خیالات کا اظہار قومی کمیشن برائے امن و انصاف کے تحت سیمینار ﴿امن کی راہ میں حائل رکاوٹیں اور ان کا حل ﴾ میں بطور مہمان خصوصی اپنے خطاب میں کیا ۔انہوں نے کہا کہ اور یہی حال عالمی امن کا ہے عالمی قوتیںاپنے مفادات کو ترجیحات بنا کر ترقی پزیر ممالک کا استحصال کرتے ہیںاورمختلف حیلوں بہانوں سے ان کے وسائل اپنے مفادات کے لئے بے دریغ استعمال کرتے ہیں ہمیں معاشرہ میں امن قائم کرنے کے لئے پاکستان میں بسنے والے تمام لوگوںکوایک دوسرے کے مذہب کا بھرپو مطالعہ کرنا چاہئے جس سے بھائی چارے کی فضا قائم ہوگی ان کا کہنا تھا کہ تمام مذاہب کے تہواروں کو عالمی سطح پر منانا چاہئے تمام عالمی جنگیں﴿صلیبی﴾مذہب کے نام پر لڑی گئیںان کا برداشت اور صلح کے نام پر خاتمہ ہوا۔ان کا کہنا تھا کہ قیام امن کے لئے معاشرہ کے ہر فرد کوبرداشت کی راہ پر چل کر اپنا کردار ادا کرنا ہو گا ۔سیمینار سے ایم پی اے نسیم ناصر خواجہ،سابق ایم پی اے ارشد بگو ایڈووکیٹ،پیٹر جیکب، فادر فلپ جان،دائود بھٹی،فادر فرانسس گلزار،اختر جانثار،پادری جاوید سلویسٹراوردیگر مقررین نے خطاب کیا اور امن کے حوالہ سے قومی کمیشن برائے امن و انصاف کی کوششوں کو سراہا۔

یہ بھی پڑھیں  پی ٹی آئی کی عائلہ ملک کا الیکشن کمیشن کوجھانسہ

یہ بھی پڑھیے :

Back to top button

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker