تازہ ترینعلاقائی

ٹنڈوآدم واقعہ کے ملزمان کو آج جسمانی ریمانڈ کےلئےعدالت میں پیش کردیاگیا

سانگھڑ﴿نامہ نگار﴾گذشتہ روز ٹنڈوآدم کے علاقے جوہر آباد میں ولی محمد برڑو کے مکان میں نوجوان ’’ فرازقریشی‘‘ روزینہ عمرانی نامی لڑکی کو لیکر آیا کہ اہل محلہ نے دیکھ لیا۔اہل محلہ نے مکان کو تالا لگاکر مکان کا گھیرائوکرلیا اورپولیس کو اطلاع کردی۔اہل محلہ کا لزام ہے کہ مذکورہ مکان کو ڈیڑھ سال سے عیاشی کے اڈے کے طور پر استعمال کیا جارہا تھا۔شہریوں کی جانب سے گھیرائو ہونے کے بعد مبینہ بدچلن نوجوانوں نے اپنے دوستوں کو مطلع کردیا جس کے بعد برڑو برادری کے کچھ مسلح لوگ جائے وقوعہ پر پہنچ گئے اور نوجوانوں کو مجمع میں سے زبردستی اپنے ساتھ لیجانے کی کوشش کی اور فائرنگ کردی جس کے نتیجہ میں ایک شہر ی لڑکا اقبال شیخ زخمی ہوگیا جس کے بعد شہری مزید مشتعل ہوگئے۔شہریوں کی بڑی تعداد ڈنڈے، کلہاڑیاں ،لوہے کی سلاخیں،خنجر اور اسلحہ لیکر آگئی اور برڑو برادری کے مسلح افراد کو گھیر کر ڈنڈوں ،کلہاڑیوں اور پتھروں کی برسات کردی جس کے نتیجے میں 50 سالہ غلام محمد برڑو ہلاک جبکہ سرور برڑو شدید زخمی ہوگئے ۔زخمی کو اسپتال داخل کرادیا گیا۔ہلاک ہونے والے شخص کی لاش پوسٹ مارٹم کے بعد ورثائ کے حوالے کردی گئی۔میڈیکل آفیسر عتیق شاہ کے مطابق مقتول کے جسم پر کلہاڑیوں دیگر نوک دار آلات کے 9 نشانات تھے اور ان کی موت سر اور سینے پر لگنے والی چوٹوں کے باعث ہوئی۔
وزیر اعلیٰ سندھ،گورنر سندھ اور صدر پاکستان آصف علی زرداری نے واقعہ کا نوٹس لیا اور سندھ حکومت نے ڈی آئی جی میرپور خاص غلام حیدرجمالی کو انکوائری آفیسر مقر کیا جنہوں نے جائے واقعہ پر پہنچ کر واقعہ کی تحقیقات کا آغاز کردیا۔ڈی آئی جی میرپور خاص نے متعلقہ تھانہ ٹنڈوآدم بی سیکشن کو فوری طور پر مقدمہ درج کرنے کا حکم دیا۔تھانہ کے SHO غلام مصطفیٰ ہنگوروکو معطل اور ایک اے ایس آئی شوکت راجپوت اور اہلکارندیم راجپوت کو معطل کر کے گرفتار کرلیا گیا۔رات کو دیر سے مقتول کے بھائی گل محمد برڑو کی مدعیت میں 55 افراد کے خلاف مقدمہ درج کرلیا گیا۔پولیس نے 10 افراد کو گرفتار کرلیا جبکہ مزید نامزد ملزمان کی گرفتاری کے لئے پولیس چھاپے مار رہی ہے۔،گرفتار شدگان میں نظام دین،نورمحمد،راشد،فرحان،یامین اور دیگر شامل ہیں۔پولیس نے وقعہ کی ابتدائی رپورٹ پیش کردی ہے جبکہ ایس ایس پی سانگھڑ جناب عبداللہ شیخ کی سربراہی میں ایک تحقیقاتی کمیٹی قائم کی گئی ہے جو 14 دن میں تفصیلی رپورٹ پیش کرے گی۔ ایس ایس پی سانگھڑ جناب عبداللہ شیخ نے ایک نجی ٹیلی وژن سے بات چیت کرتے ہوئے بتایا کہ مالک مکان اچھے کردار کا حامل نہیں ہے اور پولیس کو اس سے قبل متعدد بار اس کے خلاف جھگڑے اور بدمعاشی کی شکایات ملتی رہی ہیں۔ ٹنڈو آدم میںشہریوں کے تشدد سے ہلاک ہونے والے غلام محمد برڑو کی ان کے آبائی قبرستان میں تدفین کردی گئی۔ گائوں غلام محمد برڑو میں مقتول کی تدفین کے موقع پر رقت آمیز مناظر دیکھنے میں آئے۔واقعہ کو بعض شر پسندوں نے لسانی رنگ دینے کی کوشش کی جس کے بعد شہر میں عجیب خوف و حراس کی صورتحال پیدا ہوگئی تھی اور لوگوں نے اپنے آپ کو گھروں تک محدود کرلیا تھا
ٹنڈوآدم واقعہ کے ملزمان عبدالحمید شیخ، یامین شیخ، انور راجپوت ، راشد شیخ ، محمد نظام،محمد اکرم کو آج سول اینڈ جوڈیشل مجسٹریٹ عبدالرحیم چانڈیو کی عدالت میں ٹنڈوآدم پیش کر دیا گیا۔ عدالت نے ملزمان کا پولیس کو مزید تفتیش کے لئے 7دن کا جسمانی ریمانڈ دے دیا۔ ٹنڈوآدم واقعے میں شہریوں کے ہاتھوں قتل ہونے والے غلام محمد برڑو کے قتل کا مقدمہ 55افراد کے خلاف درج کیا گیا تھا جس میں 10افراد نامزد جبکہ 45افراد نامعلوم ہیں۔ دریں اثنائ اسی عدالت میں اس واقعے کے دوسرے مقدمہ کے نامزد ملزمان ولی محمد برڑو ۔ فراز قریشی اور روزینہ عمرانی کو بھی عدالت میں پیش کیا گیا اس مقدمہ میں عدالت نے ملزمان کے خلاف مزید تفتیش کے لئے پولیس کو 5روز کا جسمانی ریمانڈ پر دے دیا۔دوسری طرف جوہرآباد محلہ کی خواتیں نے آج Bسیکشن ٹنڈوآدم تھانہ کے باہر شدید احتجاج کیا اور تھانے کا گھیراؤ کیا اور الزام عائد کیا کہ پولیس درست تحقیقات نہیں کر رہی اور شہریوں کے خلاف جھٹا مقدمہ درج کیا گیا ہے کیونکہ مقتول معاشرہ میں مشکوک کردار کا حامل شخص تھا اور اس کی بدچلنی کی پولیس کو متعدد شکایات دی گئی تھیں جبکہ پولیس نے ان عوامی شکایات پر
کوئی کاروائی نہیں کی اور مقتول با اثر ہونے کی وجہ سے پولیس خاموش تماشائی بن کر دیکھتی رہی ہے۔خواتین نے اعلیٰ حکام سے اپیل کی ہے کہ شہریوں کے ساتھ انصاف کیا جائے اور درست تحقیقات کر کے انصاف دلایا جائے۔

یہ بھی پڑھیں  سانگھڑ:پیپلزلوکل گورنمنٹ آرڈینینس کےخلاف تمام چھوٹےبڑےعلاقوں میں شٹرہڑتال

یہ بھی پڑھیے :

Back to top button

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker