شہ سرخیاں
بنیادی صفحہ / علاقائی / سنجھورو:تحصیل ایگریکلچرل آفیس سنجھورو سے عملا غائب کاشتکار پریشان

سنجھورو:تحصیل ایگریکلچرل آفیس سنجھورو سے عملا غائب کاشتکار پریشان

سنجھورو﴿ نامہ نگار﴾ تحصیل ایگریکلچرل آفیس سنجھورو سے عملا غائب کاشتکار پریشان ۔ تفصیلات کے مطابق سنجھورو زرعی آفیس کا عملا گھر بیٹھ کر تنخواہ حاصل کر رہا ہے۔کاشتکاروں نے صحافیوں سے بات چیت میں بتایا کہ زرعی آفیس کو کافی دنوں سے تالا لگا ہوا ہے ہم جب بھی زرعی آفیس کسی زرعی مشورہ کے لئے آتے ہیں تو یہاں پر کو ئی سرکاری افسر موجود نہیں ہوتا جس کی وجہ سے کاشتکاروں کو پریشانی کا سامنا کرنا پڑتا ہے جب کہ افسران گھر بیٹھے تنخواہیں لے رہیںہیں۔ مارکیٹ میں غیر معیاری بیج، کھاد اور ادویات سرے عام فروخت کی جارہی ہیں۔جس کی وجہ سے کسانوں کو نقصان ہو رہا ہے۔ جبکہ ضلع سانگھڑ خصوصا تحصیل سنجھوروصوبہ سندھ میں کپاس ، گندم اور گنا کی پیداوار دینے والا سب سے بڑا ضلع ہے۔ اگر اس سائنسی دور میں کاشتکاروں کی صحیح راہ نمائی کی جائے تو پیداور میں کئی گنا اضافہ ہو سکتا ہے جس سے نہ صرف کاشتاروں کی معاشی حالت بدل سکتی ہے بلکہ ملک کے زرَمبادلہ میں بھی خاطر خواہ اضافہ ہو سکتا ہے۔کیونکہ ہمارا ملک زرعی ملک ہے اور اس کی معیشیت کا دارمدار زراعت پر ہے۔ کسانوں نے مزید کہا کہ بڑے افسوس کی بات ہے کہ حکومت کی ناقص پالیسیوں اور زرعی عملے کی غیر حاضری کی وجہ سے کسانوں کے ساتھ ساتھ ملک کا بھی نقصان ہو رہا ہے۔لہٰذہ ہم اعلیٰ حکام سے اپیل کرتے ہیں کہ مزکورہ کرپٹ اور غیر زمہ دار افسران کے خلاف ضابطہ کی تادیبی کاروائی کی جائے اور کاشتکاروں کو مفید مشورہ دینے والے ایماندار اور فرض شناش افسران کو تعینات کیا جائے۔تاکہ کسان بھی ملکی معیشت میں اپنا برابر حصہ ڈال سکیں اور ملک ترقی کی راہ پر گامزن ہو سکے۔

یہ بھی پڑھیں  اسلام آباد کچہری میں خودکش حملوں پرجماعت اسلامی ضلع قصور کے رہنماؤں کا شدید ردعمل