علاقائی

غربت او ربے روزگاری پر قابوپانے کیلئے قرضہ حسنہ کی ادائیگی دین اسلام کی اصل روح ہے

سرگودھا﴿تحصیل رپورٹ﴾ غربت او ربے روزگاری پر قابوپانے کیلئے قرضہ حسنہ کی ادائیگی دین اسلام کی اصل روح ہے ۔ ’اخوت ‘ نے ملک میں قرض حسنہ کے ذریعے مواخات مدینہ کی یاد تازہ کر دی ۔ اخوت کاا دارہ اب تک ملک بھر میں دولاکھ افراد میں دو ارب روپے کے قرضہ حسنہ کی رقم تقسیم کر چکاہے اور اس کے دائرہ کار میں قرضہ حسنہ کی برکت سے روز بروز اضافہ ہورہاہے جس سے ملک میں بے روزگار افراد کو اپنے کاروبار کے اجرائ اور اس میں توسیع کیلئے بلاسود قرضہ کاحصول بہت بڑی خوش قسمتی ہے اور قرضہ لینے والے افراد بخوشی قرضہ واپس کر کے اس ادارے کی حوصلہ افزائی اور اس کی کامیابی کیلئے کردار ادا کر رہے ہیں ۔ ان خیالات کا اظہار آج ’ اخوت ‘ کے ایریا منیجر مہتاب علی نے جامع مسجد اشرفیہ گولچوک میں ضلع سرگودہا کے 226 -افراد کو قرض حسنہ کی تقسیم کے سلسلہ میں منعقدہ تقریب کے موقع پر بریفنگ دیتے ہوئے کیا ۔ اس موقع پر چیئرمین سٹیرنگ کمیٹی اخوت محمد عرفان بٹ ‘ ڈاکٹر ہارون الرشید تبسم ‘ صدر چیمبر آف کامرس مظہراحمد ملک کے علاوہ انجمن تاجران او رشہریان کے عہدیداروں او رمخیر حضرات نے شرکت کی ۔ مہتاب علی نے بتایا کہ آ ج ضلع سرگودہا کے مزید 226 -افراد میں 41 لاکھ دس ہزار روپے قرضہ حسنہ کے طو رپر تقسیم کئے جارہے ہیں اور گزشتہ چار ماہ کے دوران 70 لاکھ روپے کی رقم تقسیم کی گئی تھی ۔ انہوں نے کہا کہ اس سکیم سے لوگوں میں اپنے کاروبار کو وسعت دینے کا جذبہ فروغ پارہاہے اور اس سے ملک میں گداگری ‘ غربت اور بے روزگاری کے مسائل پر قابو پانے میں مدد مل رہی ہے ۔ قرضہ حسنہ حاصل کر کے لوگ چھوٹے کاروبار شروع کر رہے ہیں۔ انہوں نے بتایاکہ اب اخوت نے بیس سے پچاس ہزار روپے تک کے قرضے دینے شروع کر دیئے ہیں جن کا ٹرن آؤٹ سوفیصد رہاہے ۔ اس موقع پر ڈاکٹر ہارون الرشید تبسم ‘ محمد عرفان بٹ او رمظہر احمدملک نے خطاب کرتے ہوئے اخوت کی قرضہ حسنہ سکیم پر اسے خراج تحسین پیش کیا جس سے ملک میںلاکھوں افراد کو ر وزگار کے سنہری مواقع حاصل ہوئے ہیں۔

یہ بھی پڑھیے :

Back to top button
Close

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker