پاکستانتازہ ترین

پنجاب حکومت توانائی کے بحران پر قابو پانے کیلئے تیزرفتاری سے آگے بڑھ رہی ہے، شہباز شریف

shahbaz sharifلاہور(نمائندہ خصوصی)وزیر اعلیٰ محمد شہباز شریف نے کہا ہے کہ پاکستان کو توانائی کے بحران کا سامنا ہے ۔ توانائی کی کمی سے قومی معیشت سمیت تعلیم، صحت ، زراعت اور سماجی ترقی کے دیگر شعبے بری طرح متاثرہوئے ہیں ۔ ملک کی ترقی ، صنعتی عمل کو تیز کرنے اور روزگار کے مواقع پیدا کرنے کے لئے توانائی کے بحران کا جلد سے جلد خاتمہ بے حد ضروری ہے ۔ حکومت توانائی کی کمی کے مسئلے پر قابو پانے کے لئے سنجیدگی سے آگے بڑھ رہی ہے اور متبادل ذرائع سے بجلی کے حصول کے منصوبوں پر تیزی سے کام کیا جا رہا ہے ۔ توانائی بحران کے خاتمے کے لئے ملکی اور غیر ملکی سرمایہ کارکمپنیوں سے بھی تعاون حاصل کیا جا رہا ہے ۔ چین کی متعدد کمپنیوں سے توانائی کے حصول کے منصوبوں کے حوالے سے کئی ایک معاہدے کئے گئے ہیں۔ زیڈ ٹی ای کارپوریشن چائنہ بھی توانائی کے شعبے میں تعاون کر سکتی ہے ۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے آج یہاں زیڈ ٹی ای (ZTE) کارپوریشن چائنہ کے نائب صدر لی گوانگ یونگ (Mr. Le Guang Yong)کی قیادت میں وفد سے ملاقات کرتے ہوئے کیا ۔ صوبائی وزیر توانائی شیر علی خان ، کوآرڈینیٹر برائے توانائی شاہد ریاض گوندل، سیکرٹری لوکل گورنمنٹ، ڈی جی ایل ڈی اے ، نیسپاک کے حکام اور متعلقہ افسران بھی اس موقع پر موجود تھے۔ملاقات کے دوران سولر سٹریٹ لائٹس اور توانائی کے دیگر منصوبوں میں تعاون کے حوالے سے تبادلہ خیال ہوا ۔وزیر اعلی محمد شہباز شریف نے وفد سے بات چیت کرتے ہوئے کہا کہ گیس اور بجلی کے شعبے میں طلب زیادہ اور پیداوار کم ہے ۔ طلب اور رسد میں توازن پیدا کرنے کے لئے توانائی کے منصوبوں کو تیزی سے مکمل کرنا وقت کی اہم ترین ضرورت ہے ۔ ہمارے لئے ایک ایک لمحہ قیمتی ہے ، قوم کو توانائی کی قلت کے مسئلے سے نجات دلانے کے لئے وقت ضائع کئے بغیر آگے بڑھ رہے ہیں ۔ چین کی کمپنیوں کے ساتھ توانائی کے شعبے میں تعاون کے معاہدوں پر جلد عملدرآمد کے لئے اقدامات اٹھائے جا رہے ہیں ۔ روایتی ذرائع سے توانائی کے حصول کے ساتھ ساتھ غیر روایتی ذرائع سے توانائی کے حصول کے منصوبوں پر بھی تیزرفتاری سے کام جاری ہے ۔ انہوں نے کہا کہ ترقیاتی اور دیگر منصوبوں کی شفاف اور معیاری تکمیل پنجاب حکومت کی پالیسی ہے۔ توانائی سمیت ہر شعبہ میں منصوبے نہایت شفاف طریقے سے تیزی سے مکمل کئے جار ہے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ چولستان میں وسیع و عریض رقبے پر قائد اعظم سولر پارک بنانے کی منصوبہ بندی کی گئی ہے اور اس پارک میں بھی کئی چینی کمپنیوں نے سرمایہ کاری کے لئے آمادگی ظاہر کی ہے ۔ انہوں نے کہا کہ گڈانی میں کول پاور کوریڈور بنایا جار ہا ہے ۔ چین اور قطرکی کمپنیوں نے گڈانی میں 6 ہزار 600 میگاواٹ کے کول پاور پلانٹ لگانے کے حوالے سے مفاہمتی یادداشت پر دستخط کئے ہیں ۔ انہوں نے کہا کہ حکومت نے لاہور سمیت دیگر شہروں میں سٹریٹ لائٹس اور ٹریفک سگنلز کو مرحلہ وار سولر انرجی پر منتقل کرنے کا بھی پروگرام بنایا ہے جس پر تیزی سے کام جاری ہے۔ انہوں نے کہا کہ شمسی توانائی سے چلنے والی ایل ای ڈی لائٹس کو سٹریٹ لائٹس کے طور پر استعمال کر کے بجلی کی بچت کی جا سکتی ہے اور حکومت نے اس حوالے سے بھی ٹھوس منصوبہ بندی کی ہے ۔ زیڈ ٹی ای کارپوریشن چائنہ کے نائب صدر لی گوانگ یونگ نے اس موقع پر گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ ان کی کارپوریشن توانائی کے شعبہ میں پنجاب حکومت کے ساتھ تعاون بڑھانے میں دلچسپی رکھتی ہے اور اس شعبے میں مشترکہ منصوبے شروع کئے جا سکتے ہیں ۔

یہ بھی پڑھیں  شہباز شریف کا رمضان بازاروں کا دورہ

یہ بھی پڑھیے :

Back to top button

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker