پاکستانتازہ ترین

وزیر اعلیٰ پنجاب کا سیلاب زدہ علاقوں کا دورہ، متعدد افسران معطل

لاہور(مانیٹرنگ سیل)وزیر اعلیٰ شہباز شریف جنوبی پنجاب کے سیلاب زدہ علاقوں کے دورہ پر ہیں۔ وزیر اعلیٰ نے کہا ہے کہ سیلاب متاثرین کو تنہا نہیں چھوڑیں گے۔ تمام بند اور پشتے محفوظ ہیں۔ وزیر اعلیٰ نے لیہ کے نواز شریف اسپتال میں طبی سہولتیں اور عملے کی عدم تعیناتی کا نوٹس لیتے ہوئے ایم ایس، ڈی ایم ایس، اے ایم ایس اور ای ڈی او ہیلتھ کو معطل کرنے کا حکم دیتے ہوئے سیکریٹری صحت سے رپورٹ طلب کرلی۔ وزیر اعلیٰ پنجاب شہباز شریف نے لیہ کے سیلاب متاثرہ علاقے بھکری احمد خان کا دورہ کیا۔ میاں شہباز شریف نے ریلیف کیمپوں میں اشیائے خور و نوش اور ادویات کی فراہمی کا جائزہ لیا۔ ضلعی انتظامیہ اور کابینہ کمیٹی برائے فلڈ نے وزیر اعلیٰ کو دریائے سندھ سے ملحقہ نشیبی علاقوں میں امدادی سرگرمیوں پر بریفنگ دی۔ انتظامیہ نے وزیر اعلیٰ کو بتایا کہ دریائے سندھ میں لیہ کے مقام پر پانی کا بہاؤ چار لاکھ کیوسک ہے۔ سیلابی صورتحال کے پیش نظر قریبی آبادیوں سے سو فیصد انخلا مکمل کرلیا گیا ہے۔ متعلقہ اداروں سے خطاب کرتے ہوئے وزیر اعلیٰ کا کہنا تھا کہ سیلاب زدگان کی امداد اور بحالی کے لیے کسی قسم کی غفلت برداشت نہیں کی جائے گی۔ ریلیف کیمپوں میں اشیائے خور و نوش، پینے کا صاف پانی اور ادویات کی وافر مقدار موجود ہونی چاہیئے۔ بعد ازاں وزیر اعلیٰ نے ریلیف کیمپوں میں سیلاب متاثرین سے ملاقات بھی کی اور ان سے انتظامات کے متعلق دریافت کیا۔ وزیر اعلیٰ نے لیہ میں نواز شریف ہسپتال کا اچانک دورہ بھی کیا۔ دورے کے دوران ہسپتال کو مکمل طور پر فنکشنل نہ کرنے اور طبی سہولتوں کی عدم دستیابی پر وزیر اعلیٰ نے سخت برہمی کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ دس کروڑ کی لاگت سے ہسپتال کی عمارت بنا کر عملہ تعینات نہ کرنا مجرمانہ غفلت ہے جسے ہرگز نظر انداز نہیں کیا جاسکتا۔ وزیر اعلیٰ پنجاب نے ہسپتال میں طبی سہولتیں اور عملے کی عدم تعیناتی کا سختی سے نوٹس لیتے ہوئے ایم ایس، ڈی ایم ایس، اے ایم ایس اور ای ڈی او ہیلتھ کو معطل کرنے کا حکم دے دیا۔ وزیر اعلیٰ پنجاب نے چیف سیکریٹری اور سیکریٹری صحت سے رپورٹ بھی طلب کرلی۔

یہ بھی پڑھیں  ’’زکوٹا جن‘‘ خالق حقیقی سے جا ملے

یہ بھی پڑھیے :

Back to top button

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker