پاکستانتازہ ترین

اسلحہ برآمدگی کیس:شاہزین بگٹی نے ساتھیوں سمیت گرفتاری پیش کردی

کوئٹہ(نمائندہ خصوصی) جمہوری وطن پارٹی کے رہنماء نوابزادہ شاہزین بگٹی نے اسلحہ برآمدگی کیس میں اپنے چھبیس ساتھیوں کے ہمراہ پولیس کو گرفتاری پیش کردی۔گرفتاری پیش کرنے کے موقع پرشاہزین بگٹی کا موقف تھا کہ وہ گرفتاری سے نہیں گھبراتے، گرفتاری کے خلاف اپیل کریں گے ،اسلحہ برآمد کیس میں سپریم کورٹ سے ضمانت کی منسوخی کے بعد ایڈیشنل سیشن جج کوئٹہ نے گذشتہ روز نوابزادہ شاہزین بگٹی کے گرفتاری کے وارنٹ جاری کئے تھے جس پر آج پولیس اور انسداد دہشت گردی کی فورس کے اہلکار کوئٹہ میں ان کی رہائش گاہ پہنچ گئے، اس دوران وہاں صوبائی وزیرداخلہ ظفراللہ زہری بھی پہنچ گئے جہاں انہوں نے شاہزین بگٹی سے ملاقات کے دوران ان کی گرفتاری کے وارنٹ دکھائے، جس پر انہوں نے اپنے گھر سے باہر آکر پولیس کو گرفتار پیش کردی، اس موقع پر میڈیا کے نمائندوں سے بات چیت میں ان کا کہنا تھا کہ وہ گرفتاری سے نہیں گھبراتے تاہم انہیں جھوٹے کیس میں پھنسایاگیا، ان کا کہنا تھا کہ وفاقی وزیر داخلہ ایک جانب باہر بیٹھے ناراض لوگوں کا ملک واپس آنے پر استقبال کی بات کرتے ہیں جبکہ دوسری جانب ہم ملک میں بیٹھے ہیں ہم سے یہ سلوک کیا جارہا ہے، اس موقع پر ان کا یہ بھی کہنا تھا کہ نواب بگٹی کے قاتلوں کو تو پروٹوکول دیا جاتا ہے، انہیں تو گرفتار نہیں کیا جاتا،انہوں نے کہا کہ ہمارے وکیل کوبھی اغواء کرلیا گیا ہے جو کہ ہمارا کیس کمزور کرنے کی سازش ہے، اس موقع پر صوبائی وزیر داخلہ ظفراللہ زہری نے کہا کہ گرفتاری پیش کرنے کے موقع پر شاہزین بگٹی نے نہ کوئی مطالبہ کیا اور نہ ہی کوئی شرط رکھی، بعد میں صوبائی وزیر داخلہ نے شاہزین بگٹی کو اپنی گاڑی میں بٹھا کر ڈسٹرکٹ جیل پہنچا دیا، ،اس موقع پر سکیورٹی کے سخت انتظامات کئے گئے تھے۔ اس سے قبل جمہوری وطن پارٹی کے مرکزی صدر نوابزادہ طلال اکبر بگٹی نےپاک نیوز  سے بات چیت میں کہا تھا کہ کہ شاہزین بگٹی سپریم کورٹ کے فیصلے کے احترام میں فوری گرفتاری پیش کرے اور اگر اس نے سپریم کورٹ کے فیصلے کی حکم عدولی کی تو اسے پارٹی کی صوبائی صدارت سے برطرف کردیاجائے گا

یہ بھی پڑھیں  کوئٹہ:بلوچستان پر توجہ نہ دی تو ایک اور بنگلا دیش بن جائیگا،شاہ زین بگٹی

یہ بھی پڑھیے :

Back to top button

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker