تازہ ترینعلاقائی

بھائی پھیرو:شیخ رشید کااین اے 142 سے الیکشن لڑنے کےاعلان سے حلقے میں ہلچل

بھائی پھیرو﴿نامہ نگار﴾ شیخ رشید کے حلقہ2 NA14سے الیکشن لڑنے کے اعلان کا تحریک انصاف کے ہزاروں کارکنوں کی طرف سے زبردست خیر مقدم۔اس حلقہ کے تحریک انصاف کے پہلے امیدواروں کے چہرے لٹک گئے۔ماضی میں جیتنے والے دوسری جماعتوں کے سابقہ ممبران قومی اسمبلی کے ورکروں میں کھلبلی۔تفصیلات کے مطابق گزشتہ روز تحریک انصاف کے رہنماعمران خاں اور عوامی تحریک کے شیخ رشید کے درمیان انتخابی اتحاد کی خبروں کے بعد شیخ رشید کے قصور کے حلقہ NA142سے انتخاب لڑنے کی خبروں نے پتوکی،سرائے مغل اور بھائی پھیرو کے سیاسی حلقوں میں ہلچل مچا دی۔سارا دن لوگ صحافیوں اور سیاسی رہنمائوں کو فون کر کر کے اس بریکنگ نیوز پر تبصرے کرتے رہے۔تحریک انصاف کے ایک مقامی رہنما ندیم سمیت سینکڑوں کارکنوں نے اس خبر کا خیر مقدم کر تے کہا کہ اگر شیخ رشید نے اس حلقہ سے الیکشن لڑا تو وہ ان کیلیے تن من دھن کی بازی لگادیں گے۔جہاں اس خبر سے پی ٹی آئی کے نظریاتی کارکنوں میں خوشی کی لہر دوڑی وہاں اس حلقہ سے پی ٹی آئی کے پہلے سے بنے امیدواراں قومی و صوبائی اسمبلی کے مفاد پرست ورکروں کے چہرے مرجھا گئے ور ان پر مردنی چھاگئی۔دوسری طرف اس حلقہ سے پہلے سے کامیاب ہونے والے سابقہ ممبر قومی اسمبلی رانا محمد حیات خاں اور موجودہ ممبر قومی اسمبلی سردار طالب حسن نکئی کیلیے بھی یہ خبر انتہائی پریشان کن ثابت ہوگی کیونکہ اس حلقہ کے لوگ بار بار اور باری باری کامیاب ہونے والے سابقہ امیدواران سے اکتا چکے ہیں اور کسی نئے مسیحا کی تلاش میں ہیں ۔اس حلقہ کے عوام کو آئندہ انتخابات میں جماعت اسلامی کے امیدوار قومی اسمبلی حاجی محمد رمضان ،اور عوامی تحریک کے شیخ رشید کی شکل میں دو نئے امیدوار مل جائیں گے اور اگر عوام نے چاہا تو انکی جان سابقہ امیدواروں سے چھوٹ جائیگی۔پاکستان میں آئندہ انتخابات میں پھر اقتدار میں آنے کی دعویدار اور سب سے بڑی پارٹی کا دعوی کر نے والی پی پی پی کے کسی امیدوار نے ابھی تک اس حلقہ سے الیکشن کمپین شروع نہیں کی جبکہ پی پی پی کی حلقہ NA142 کی سابقہ امیدوار مسز ناصرہ میو نے اس حلقہ کی بجائے حلقہ NA138 سے اپنی باقاعدہ انتخابی مہم شروع کر کے عملن اس حلقہ NA142 کو خیر باد کہہ دیا ہے۔بہر حال آئیند ہ انتخاب آنے تک اس حلقہ میں اور کون کون سے امیدوار انتخابی میدان میں اتریں گے اس کا فیصلہ انتخابات کے قریب واضع ہوتا جائیگا۔

یہ بھی پڑھیے :

Back to top button