تازہ ترینعلاقائی

ایس ایچ او نشتر ٹاﺅن کی صحافی کو دھمکیوں قابل مذمت ہیں: محمد عمران سلفی

مصطفی آباد/للیانی(نامہ نگار) ایس ایچ او نشتر ٹاﺅن کی صحافی کو دھمکیوں قابل مذمت ہیں، اعلی حکام واقع کا فوری نوٹس لیتے ہوئے سنگین نتائج کی دھمکیاں دینے والے ایس ایچ او کو نوکری سے ڈسمس کریں: ہنگامی اجلاس میں مطالبہ، تفصیلات کے مطابق خبر لگانے پر سنیئر صحافی مرکزی پریس کلب کاہنہ کے صدر محمدیوسف نجمی کو ڈکیتی مزاحمت کی خبر لگانے پرسنگین نتائج کی دھمکیاں دینے پر پریس کلب مصطفی آباد للیانی رجسٹرڈ، یونین آف جرنلسٹ، الیکٹرونک میڈیا کا ہنگامی اجلاس صدر پریس کلب محمد عمران سلفی کی زیر صدارت ہوا، اجلاس میں ایس ایچ او نشتر کالونی اکرام گجر کی دھمکی آمیزآڈیوکال پلے کرکے سنی گئی جس میں وہ خبر لگانے پر سنگین نتائج کی دھمکیاں دیتے ہوئے انتہائی غنڈا گردی کا مظاہرہ کرتے ہوئے سنا گیا، جس پر تمام صحافیوں نے واقع کی شدید الفاظ میں مذمت کرتے ہوئے اعلی حکام سے غنڈا گردی کا مظاہرہ کرنے اور سنیئر صحافی محمد یوسف نجمی کو دھمکیاں دینے والے ایس ایچ او نشتر کالونی اکرام گجر کو نوکری سے ڈسمس کرنے اور صحافی کو تحفظ فراہم کرنے پر مطالبہ کیا گیا، صدر پریس کلب محمد عمران سلفی نے کہا کہ سنیئر صحافی محمد یوسف نجمی کو کسی قسم کا کوئی نقصان ہوا یا اس کے علاوہ کسی قسم کی انتقامی کاروائی کی گئی تو اس کا ذمہ دار ایس ایچ او نشتر کالونی اکرام گجر ہو گا، پریس کلب مصطفی آباد سمیت ضلع بھر کی صحافی برادری سنیئر صحافی محمد یوسف نجمی کے ساتھ ہیں ، کسی قسم کی انتقامی کاروائی برداشت نہیں کی جائے گی، اجلاس میں جزل سیکرٹری سہیل قمر سندھو، سرپرست اعلی ڈاکٹر اصغر علی شہزاد ،چیئرمین بابا طارق مقبول ،چیئرمین سپریم کونسل ملک محمد اقبال،سنیئر نائب صدر سیٹھ محمد حسین ، زرار علی خاں صدر یونین آف جرنلسٹ، ارشد علی شامی صدر الیکٹرونک میڈیا،شاہد عمر، عمر حیات خاں، محمد طاہر میو ، محمد جمیل سندھو، مہر مراد علی ایڈووکیٹ، عبدالقیوم ،ناصر سندھو ، چوہدری اشتیاق ،محمد اکمل کھوکھر، جمشید رشید میو،الیاس ملک ، واحد ملک، محمد جمیل رحمانی ، ارشد علی جوئیہ، رانا توقیر احمد، ملک اصغرعلی ، عبدالمنان سلفی، مہر علی مہران، حافظ محمد طاہر اقبال، حاجی عبدالقادر ، آصف امین، عمر شاہین، مہر صداقت علی ، عادل نعمان مہر ودیگر صحافیوں کی بڑی تعداد نے واقع کی شدید الفاذ میں مذمت کرتے ہوئے سی سی پی اولاہورسے واقع کا فوری نوٹس لیتے ہوئے ہنگامی بنیادوں پر کاروائی کا مطالبہ کیا ۔

یہ بھی پڑھیے :

Back to top button