علاقائی

سرگودھا:بجلی کی شتربےمہارلوڈشیڈنگ کیخلاف انجمن تاجران کی مکمل شٹرڈائون ہڑتال

سرگودہا﴿تحصیل رپورٹر﴾ بجلی کی شتر بے مہار لوڈ شیڈنگ کیخلاف انجمن تاجران کی مکمل شٹر ڈائون ہڑتال ‘گلی گلی مظاہرے ‘ٹائر جلا کر سڑکیں بلاک کردی گئیں ‘ٹریفک بری طرح جام ‘دوسرے شہروں سے آئے لوگ سرگودہا میں پھنس گئے ۔ایمبولینس سروس تک جا م کردی گئی ‘واپڈا دفاتر میں پولیس کی بھاری نفری تعینات ‘عوا م کا اراکین اسمبلی کے گھروں کا گھیرائو ‘سابقہ وفاقی وزیر کے سیکرٹریٹ پر پتھرائو بجلی کے میٹر توڑ ڈالے گئے ‘ایک ملازم زخمی ‘تفصیلات کے مطابق بجلی کی طویل لوڈ شیڈنگ سے تنگ عوام انجمن تاجران کی ہڑتال کی کال پر سڑکوں پر نکل آئے شہر بھر میں بھرپور احتجاجی مظاہروں کے دوران نظام زندگی مکمل طور پر مفلوج کردیا گیا ۔یونیورسٹی روڈ ‘خوشاب روڈ‘خیام چوک ‘سول ہسپتال چوک ‘لاری اڈا چوک ‘فاطمہ جناح روڈ سمیت شہر کی اہم سڑکوں پر ڈنڈا بردار مظاہرین نے ٹائر جلا کر ٹریفک نظا م معطل کردیا مظاہرین نے حکومت اور واپڈا کیخلا ف سخت نعرے بازی کی اس موقع پر مظاہرین سے خطاب کرتے ہوئے تاجر ‘سیاسی و سماجی راہنمائوں نے کہا کہ بجلی کی لوڈ شیڈنگ نے کاروباری طبقے کی کمر توڑ کر رکھ دی جبکہ عوام کے گھروں کے چولہے تک ٹھنڈے ہوگئے بارہا وفاقی حکومت کی جانب سے لوڈ شیڈنگ کے خاتمے کے دعوئو ںکے باوجود واپڈا کی جانب سے شتر بے مہار بجلی کی لوڈ شیڈنگ کا سلسلہ جاری ہے اور سرگودہا کے اراکین اسمبلی سمیت کوئی بھی ہماری آواز حکومتی ایوانوں تک نہیں پہنچا سکا مظاہرین نے کہا کہ اگر لوڈ شیڈنگ کا فوری خاتمہ نہ کیا گیا تو واپڈا املاک سمیت دیگر اہم حکومتی اداروں پر حملے کیے جائینگے اور سول نافرمانی کی تحریک شروع کردیں گے دوسری طرف لوڈ شیڈنگ کیخلاف جاری احتجا ج کے دوران بپھرے مظاہرین نے رکن قومی اسمبلی سابق وزیر مملکت برائے داخلہ تسنیم قریشی کی رہائش گاہ اور پیپلز سیکرٹریٹ کا گھیرائو کرتے ہوئے بجلی کے میٹر توڑ دئییاور شدید پتھرائو کیا جس کی زد میں آکر پیپلز سیکرٹریٹ اور ملحقہ گھروں کے شیشے ٹوٹ گئے جبکہ پتھر لگنے سے پیپلز پارٹی کا کارکن شدید زخمی ہوگیا ۔

یہ بھی پڑھیں  دیپالپور:اکاؤٹنٹ ٹی ایچ کیو ہسپتال دیپالپورالطاف حسین کی اہلیہ انتقال کر گئیں

یہ بھی پڑھیے :

Back to top button

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker