تازہ ترینعلاقائی

سیالکوٹ: کروڑوں روپے کی لاگت سے 2008ء سے فنڈز کی عدم دستیابی کی باعث ادھورے ترقیاتی منصوبے مکمل ہوں گے

سیالکوٹ(بیورورپورٹ)19کروڑ روپے کی لاگت سے ضلع سیالکوٹ میں2008ء سے فنڈز کی عدم دستیابی کی باعث 90 ادھورے ترقیاتی منصوبے مفاد عامہ میں پایہء تکمیل کو پہنچائے جائیں گے ۔ یہ بات پاکستان مسلم لیگ ن کے رکن صوبائی اسمبلی محمد منشاء اللہ بٹ نے ڈسٹرکٹ ڈویلپمنٹ کمیٹی سیالکوٹ کے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کہی ۔ اجلاس میں رکن قومی اسمبلی چودھری ارمغان سبحانی،رکن صوبائی اسمبلی چودھری محمد اکرام، ڈی سی او سیالکوٹ افتخار علی ساہواورای ڈی او فنانس سیالکوٹ ندیم سرور بھی موجود تھے ۔محمد منشاء اللہ بٹ نے کہا کہ وزیر اعلیٰ پنجاب محمد شہباز شریف نے ضلع سیالکوٹ میں فنڈز کی کمی کے باعث ادھوری ترقیاتی اسکیموں کو جلد از جلد مکمل کرنے کا فیصلہ کیا گیا ہے ۔ انہوں نے کہا کہ سکولوں اور کالجوں کی نامکمل اسکیموں کوترجیحی بنیادوں پر مکمل کی جائے گا ۔ انہوں نے محکمہ تعلیم کے مقامی حکام کو ہدایت کی کہ وہ ضلع میں ایسے لڑکیوں کے سکول کی جن کی چاردیواری اور ٹائلٹس موجود نہیں ان کی نشاندہی کریں تاکہ ان سکولوں میں بنیادی سہولیات کی فراہمی کو یقینی بنایا جاسکے ۔ انہوں نے کہاکہ سکولوں کی حالت زار کو بدلنے کیلئے حکومت پنجاب تمام ممکنہ وسائل بروئے کار لارہی ہے ۔ ڈی سی او سیالکوٹ افتخار علی ساہو نے بتایا کہ وزیر اعلیٰ پنجاب نے ضلع کی سطح پر ادھوری ترقیاتی اسکیموں کو مکمل کرنے کیلئے تین رکنی کمیٹی تشکیل دی ہے جس میں مجھ سمیت 2پارلیمنٹرین رکن ہے ۔ انہوں نے کہاکہ یہ کمیٹی ضلع میں فنڈز کی منتظر ادھوری اسکیموں کا جائزہ لیکر وزیر اعلیٰ پنجاب کو ان منصوبوں کو مکمل کرنے کیلئے مطلوبہ فنڈز کی فراہم کیلئے درخواست دے گی ۔ اجلاس میں 83سکولوں اور کالجز اور7سڑکوں کے منصوبوں کو مکمل کرنے کا فیصلہ کیا گیا۔

یہ بھی پڑھیے :

Back to top button
error: Content is Protected!!