تازہ ترینعلاقائی

ڈسٹرکٹ ہیلتھ آفیسر سیالکوٹ کتے کاٹنے کی ویکیسن لگانے کی بجائے متاثرہ شہریوں کو پانی والے انجکشن لگانے کا انکشاف، تحققیات کا حکم

sialkotسیالکوٹ(سعید پاشا)ڈسٹرکٹ ہیلتھ آفیسر سیالکوٹ کتے کاٹنے کی ویکیسن لگانے کی بجائے متاثرہ شہریوں کو پانی والے انجکشن لگانے کا انکشاف شہری کی درخواست پر ڈی سی او سیالکوٹ افتخار علی ساہو نے تحققیات کا حکم دے دیا اور ای ڈی او ہیلتھ سیالکوٹ سے ایک ہفتہ میں رپورٹ طلب کر لی ۔تفصیلات کے مطابق نواحی بھو بھنگی کے رہائشی علامہ اقبال ٹیچنگ ہسپتال کے ملازم محمد امجد اقبال بٹ نے ڈی سی او سیالکوٹ کو تحریری درخواست میں الزام لگایا ہے کہ اورنگ زیب سینئر مائیکرو سکوپکن ،ادریس سٹور کیپر ،کاشف ،امین لیبارٹری اٹینڈنٹ نے متاثرہ شہریوں کو کتے کے کاٹنے کی ویکیسن لگانے کی بجائے پانی والے انجکشن لگا رہے ہیں اور ویکسین کے خشک ٹیکے جس کے ایک ٹیکہ کی قیمت 850روپے ہے پرائیویٹ میڈیکل سٹور وں پر فروخت کر رہے ہیں درجہ چہارم کے ملازم کاشف او ر امین متاثرہ شہریوں کو پانی والے ٹیکے لگا رہے ہیں اور دوسرے افراد اس مکرو ہ دھندے کی سر پرستی کر رہے ہیں ڈسٹرکٹ ہیلتھ آفیسر کی ناک کے نیچے معصوم شہریوں کی زندگیوں سے کھیلا جا رہا ہے ۔متاثرہ شخص محمد امجد اقبال نے بتایا کہ مجھے کتے کے کاٹنے کی ویکسین لگانے کی بجائے پانی والے انجکشن لگائے جاتے رہے جس کی وجہ سے میر ے بازو میں سخت درد اور بازو ذائع ہونے کا اندیشہ ہے ۔رابطہ کر نے پر اورنگ زیب سینئر مائیکرو سکوپکن نے بتایا کہ درجہ چہارم کا ملازم کاشف ڈسٹرکٹ ہیلتھ آفیسر کے حکم پر لوگوں کو پانی والے انجکشن لگا رہا ہے الزامات بے بنیاد ہیں یہ سارا کام میری نگرانی میں ہو رہا ہے متاثرہ شخص امجد اقبال بٹ نے خادم اعلیٰ پنجاب میاں محمدشہباز شریف ،سیکرٹری ہیلتھ اور دیگر اربات اختیار سے اصلاح واحوال اور سخت کاروائی کا مطالبہ کیا ہے ۔

 

یہ بھی پڑھیے :

Back to top button