تازہ ترینعلاقائی

سبی رکھنی روڈ کی تعمیر پر ایک ارب اڑتالیس کروڑ روپے کی لاگت سے مکمل کیا جائے گا، کمشنر

سبی(نمائیندہ خصوصی )کمشنر سبی ڈویژن شیر خان بازئی نے کہا کہ سبی رکھنی روڈ کی تعمیر پر ایک ارب اڑتالیس کروڑ روپے کی لاگت سے مکمل کیا جائے گا سبی رکھنی روڈ کی تکمیل سے علاقے میں معاشی اور تجارتی ترقی کی نئی راہیں کھلیں گی سڑک کی تعمیر کا 55فیصد کام مکمل ہوچکا ہے جولائی 2015تک سبی کا صوبہ پنجاب سے مواصلاتی رابطہ بحال ہوجائے گا سڑک کی تعمیر کا کام این ایل سی کے ذریعے کیا جارہا ہے جس پر ایک ارب اڑتالیس کروڑ روپے کی لاگت سے مکمل کی جائے گی ان خیالات کا اظہارانہوں نے اپنے دفتر میں پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کیا انہوں نے کہا کہ سبی ڈویژنل ہیڈ کوارٹر ملک کا وہ واحد ڈویژنل ہیڈ کوارٹرہے جس کا اپنے کسی بھی اضلاع سے بائی روڈ یا بائی ٹرین رابطہ نہیں ہے اپنے اضلاع میں جانے کیلئے کئی سو کلو میٹر فاصلہ طے کرنے کے بعد اضلاع میں جانا پڑتا ہے سبی ڈویژن کے اضلاع میں زمینی براہ راست رابطہ کرنے کیلئے سڑکوں کی تعمیر نا گزیر ہوچکی ہے جس کیلئے وفاقی حکومت کی جانب سے سبی رکھنی کوہلوسے ہوتے ہوئے صوبہ پنجاب تک پہنچنے میں جہاں کئی دن اور رات کا سفر طے کرنا پڑتا ہے اگر سڑک تعمیر ہوگئی تو صرف چند گھنٹوں کی مسافت کے بعد ہم اپنے اضلاع کے ساتھ ساتھ صوبہ پنجاب سے ہمارے رابطے اور قربت میں اضافہ ہوگاجس سے نہ صرف سبی بلکہ انہتائی پسماندہ علاقہ جات میں بھی ترقی کی نئی راہیں کھل سکتی ہیں جس کے بعد مذکورہ پسماندہ علاقوں میں تعلیم ،صحت ،اور دیگر بنیادی سہولیات کیلئے راہ ہموار ہوسکتی ہے انہوں نے کہا کہ ڈسٹرکٹ ضلع کوہلو اور ڈسٹرکٹ سبی کے درمیانی علاقے میں مری قبیلے کے قبائل آباد ہیں جو کہ آج انتہائی پسماندگی کے عالم میں زندگی بسر کررہے ہیں وہاں کے لوگوں کی حالت زار کو دیکھ کر یہ اندازہ بخوبی لگایا جاسکتا ہے کہ وہ لوگ پتھر سے بھی پہلے کی زندگی بسر کررہے ہیں اور بیشتر افراد کی صحت خوراک کی کمی اور سہولیات کا فقدان نظر آتا ہے انہوں نے کہا کہ سبی رکھنی روڈ کی دونوں جانب سے سڑک کا کام تیزی سے جاری ہے اور کام کرنے والے عملے کی سیکورٹی پر بھرپور توجہ دی جارہی ہے اور انشاء اللہ تعمیر کے بعد تمام صحافیوں کو بھی شاہراہ کا دورہ کرایا جائے گا تاکہ سبی اور بلوچستان میں دیگر صوبوں سے نئے مواصلاتی رابطے کی بحالی کے بعد معیشت کی ترقی کے نئے ادوار کھلیں گے انہوں نے کہا کہ اب سبی اور کوہلو کے درمیانی علاقے میں صرف بیس کلو میٹر کے فاصلے کی سڑک کی تعمیر کا کام جاری ہے اور ہماری کوشش ہے کہ سبی ہرنائی کو بھی سڑک اور ریلوے ٹریک کے ذریعے رابطے قائم کیے جائیں جس پر منصوبہ بندی سمیت دیگر امور پر کام جاری ہے انشا ء اللہ موجودہ وفاقی اور صوبائی حکومت کے توسط سے سبی کی عوام کیلئے نئی معاشی ،تجارتی ،تعلیمی،اور صحت کے حوالے سے راہیں ہموارہوں گی اس کی تعمیر میں مقامی عوام کی گہری دلچسپی بھی سامنے آئی ہے ۔

یہ بھی پڑھیں  ڈسٹرکٹ یونین آف جرنلسٹس کے نو منتخب عہدیداران کو سیا سی ومذہبی رہنماؤ ں کی طرف سے مبارکباد

یہ بھی پڑھیے :

Back to top button

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker