تازہ ترینعلاقائی

سبی:بلدیاتی انتخابات کا دوسرا مرحلہ، ڈومکی گروپ نے میدان مارلیا

سبی(نامہ نگار)بلدیاتی انتخابات کا دوسرا مرحلہ ،ڈومکی گروپ نے میدان مار لیا،سبی الائنس صرف تین نشستیں حاصل کر سکا،تفصیلات کے مطابق بلدیاتی انتخابات کے دوسرئے مرحلہ کے سلسلے میں خواتین اور اقلیت کی مخصوص نشتوں پر ہونے والی پولنگ صبح09بجے شروع ہوا جو بغیر کسی وقفہ کے شام تین بجے تک جاری رہا ،غیر حتمی و غیر سرکاری ذرائع کے مطابق میونسپل ٹاؤن کمیٹی کی 13خواتین اور02اقلیت کی نشستوں میں سے ڈومکی گروپ نے 10خواتین اور دونوں اقلیت کی نشستیں جیت کر بلدیاتی انتخابات کے دوسرئے مرحلہ میں میدان مار لیا جبکہ سبی الائنس نے صرف تین خواتین کی نشستیں حاصل کئیں ،جن میں ڈومکی گروپ کیکامیاب ہونے والی خواتین امیدوار حسن بانو بلوچ،آمنہ حسن ،زاہدہ خلجی،نگہت ظہیر،ساجدہ،سلیم خاتون،سعدیہ ظفر،شہلہ رفیق ،نجمہ عبدالقادر، خیر بی بی شامل ہیں جبکہ سبی الائنس کی حمیدہ بانو،نادیہ نذیر،اور خانزادی شامل ہیں ،اقلیت میں جئے رام داس اور سیوارام کامیاب قرار پائے ہیں اسی طرح ڈسٹرکٹ کونسل میں خواتین کی ایک نشست پشتونخوا میپ کی لعل بی بی اور بی این پی عوامی کی نورجان نے اپنی اپنی نشست جیت لیں ہیں جبکہ اقلیت کی ایک نشست پر ووٹ برابر رہے جس کی بعد ازاں ریٹرننگ آفیسر ایڈیشنل کمشنر عظیم انجم ہانبھی کے دفترمیں قرعہ اندازی کے ذریعے جیتنے والے امیدوار کے نام کا اعلان کیا جائے گا،جبکہ پانچ یونین کونسلوں میں سے یونین کونسل مل اور بابر کچھ پہلے ہی سے بلامقابلہ قرار دیا گیا تھا اور تین یونین کونسلوں یونین کونسل مرغزانی سے حلیمہ بی بی،مائی زر خاتون،لعل بی بی ،ہاجرہ خاتون اور اقلیت ارجن داس،یونین کونسل تلی سے فریدہ بی بی ،مائی انیتا،سلیم خاتون،جبکہ یونین کونسل کڑک سے اقلیتی سنجے کمار نے بھی اپنی اپنی نشستوں پر کامیابی حاصل کرلی ہے،پولنگ صبح نو بجے سے شام چار بجے تک بغیر کسی وقفے کے جاری رہی اس موقع پر سیکورٹی کے انتظامات پولنگ کے اطراف انتہائی سخت کردیئے گئے تھے حفاظتی انتظامات میں ڈسٹرکٹ پولیس،بلوچستان کانسٹیبلری،اور لیویز اہلکاروں کو تعینات کیا گیا تھا۔ 

یہ بھی پڑھیں  افغانستان، پاکستان اور ترکی کے آپس میں سہ فریقی مذاکرات

یہ بھی پڑھیے :

Back to top button

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker