تازہ ترینعلاقائی

سبی:نواز شریف گوادر سے سبی کے علاقہ این ایل سی چیک پوسٹ گرانڈوڈھ میں پہنچے تونواب چنگیز خان نے شایان شان استقبال کیا

سبی(نمائندہ خصوصی)وزیراعظم اسلامی جمہوریہ پاکستان میاں محمدنواز شریف جمعرات کوایک روزہ دورے پر گوادر سے سبی کے علاقہ این ایل سی چیک پوسٹ گرانڈوڈھ میں پہنچے تورکن صوبائی اسمبلی مسلم لیگ ن کے مرکزی رہنمانواب چنگیز خان مری نے ان کا شایان شان استقبال کیا اس موقع پرگورنر بلوچستان محمد خان اچکزئی ، وزیراعلیٰ بلوچستان نواب ثناء اللہ زہری، وفاقی وزیر عبدالقادر بلوچ، احسن اقبال وزیر مملکت میر حاصل خان بزنجو،مشیر برائے سلامتی امور ناصر خان جنجوعہ بھی ان کے ہمراہ تھے جبکہ سابق سینیٹر میر محبت خان مری نیشنل لاجسٹک سیل کے کوارٹر ماسٹر جنرل لیفٹیننٹ جنرل احمد جاوید بخاری، ڈائریکٹر جنرل لیفٹیننٹ جنرل فیصل مشتاق ،پروجیکٹ ڈائریکٹر برگیڈیئر محمد احمد علوی ،پروجیکٹ منیجر کرنل ارسلان علیم ،میجر نعیم احمد ،صوبدار میجر محمد اشرف ،صوبائی وزیر میر عاصم کرد گیلو،رکن صوبائی اسمبلی سید لیاقت علی ،ایم پی اے طاہر محمود، ایم پی اے میر جعفر خان مندوخیل ، کمانڈسدرن کمانڈر بلوچستان لیفٹیننٹ جنرل عامر ریاض، آئی جی بلوچستا ن احسن محبوب، چیف سیکرٹری بلوچستان سیف اللہ چٹھہ ، برگیڈکمانڈر سبی برگیڈیئر شہزادہ شاہد نواز ،ڈی آئی جی سبی سید انتصار حسین جعفری ،کمشنر سبی ڈویژن میر غلام علی بلوچ ،لیفٹیننٹ کرنل عمر سعید آفریدی ،ڈپٹی کمشنر سبی سیف اللہ کھیتران ، ڈپٹی کمشنر کوہلو، چےئرمین ضلع کونسل سبی ملک قائم الدین دہپال ، چےئرمین میونسپل کمیٹی سبی حاجی داؤد رند سمیت مختلف محکموں کے سیکرٹریز قبائلی سیاسی عوامی شخصیات بھی موجود تھے بعدازاں ہیلی پیڈ سے مہمانوں کو پنڈال تک لایا گیا اس موقع پر سبی کوہلو شاہراہ کی تکمیل کے حوالے سے تفصیلی بریفینگ دیتے ہوئے نیشنل لاجسٹک سیل کے ڈائریکٹر جنرل لیفٹیننٹ جنرل فیصل مشتاق نے بتایا کہ کئی سال تعطل کا شکار رہنے کے بعد پروجیکٹ پر این ایل سی کے مایہ ناز آفیسران وتجربہ کار انجینئرزنے اپنی صلاحیتوں کو استعمال کرتے ہوئے 2007سے کام کو تیزی کے ساتھ شروع کیا گیادن رات محنت سے مذکورہ روڈ جو174کلومیٹر پر مشتمل سبی کوہلو شاہراہ مکمل کرکے عوام کیلئے کھول دیا گیا ہے سبی کوہلو قومی شاہراہ سبی منڈائی لوسی کم میر دادفضل شاہ مروڈ مہوند کوہلو سے ہوتا ہوا بلوچستان پنجاب سرحدی علاقہ رکھنی سے منسلک ہوا قومی شاہراہ کی تکمیل سے سبی کوہلو رکھنی موسیٰ خیل کے علاوہ ڈیرہ غازی خان تک زمینی راستہ سیکڑکر رہ جائے گا انتہائی قلیل ٹائم میں بلوچستان سے پنجاب کا سفر ممکن ہوگا عوام کا وقت بھی اور سفری اخراجات بھی بچ جائیں گے جبکہ سبی سمیت بلوچستان بھر میں ترقی خوشحالی کا نیا باب کھل گیا ہے مقامی زمینداروں مالداروں کے ساتھ ساتھ مقامی افراد کو تعلیم صحت روزگاری کی فراہمی ممکن ہوجائیگی وفاقی اور صوبائی حکومتیں کا خواب بھی پورا ہوگاسبی رکھنی قومی شاہراہ کو عوام کیلئے کھول دیا گیا ہے سبی رکھنی قومی شاہراہ جیکب آباد سکھر اور لورالائی ڈیرہ غازی قومی شاہراہ کیلئے پل کا کام بھی دے گا جبکہ پسماندہ علاقوں کی ترقی میں بھی رول پلے کرے گا واضح رہے کہ سبی رکھنی قومی شاہراہ کے تکمیل سے قبل کوہلو جانے کیلئے کوئٹہ لورلائی بارکھاں سے کوہلوتک 16سے18گھنٹے اور ہزاروں روپے خرچ کرکے کوہلو پہنچا جاتا تھا اور اب صرف 4گھنٹوں میں کوہلو سے سبی ودیگر علاقوں میں جایا جاسکتا ہے قومی شاہراہ کے تکمیل سے قبل مقامی آبادی کئی مسائل کا شکار بھی رہی مقامی آبادی کی ترقی عوام کی خوشحالی بہتر سفر ی سہولیات کی فراہمی ممکن ہوسکی ہے قومی شاہراہ کی تکمیل سے سبی اہم شہر کا درجہ حاصل کرلے گیا جس سے سبی و گردونواح میں ترقی کا نیا باب بھی کھل جائے گا اس موقع پر وزیراعظم میاں نواز شریف نے سبی ڈویژن کیلئے دوارب روپے کا ترقیاتی پیکچ کا اعلان کیا جس میں کروڑ روپے ضلع کوہلو کے شامل ہے جبکہ سبی تلی روڈ کو تعمیر کرنے کے احکامات جاری کئے گئے اور سبی رکھنی و سبی تلی شاہراہ کو جلد ازجلد مکمل کرنے کی ہدایات بھی جاری کئیں

یہ بھی پڑھیے :

Back to top button
Close

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker