تازہ ترینعلاقائی

داؤدخیل: دریائے سندھ میں نہاتے ہوئے دس سالہ بچہ ڈوب گیا

داؤدخیل( ضیانیازی سے ) گزشتہ روز دریائے سندھ میں نہاتے ہوئے دس سالہ بچہ ڈوب گیا۔نیوی کے میرین کی ٹیم موقع پر پہنچ گئی۔ تفصیلات کے مطابق گزشتہ روز نواحی علاقہ گرڈ اسٹیشن ماڑی انڈس سے ملحقہ آبادی کا رہائشی دس سالہ تنویر عباس ولد امیر عباس اپنے دو دیگر رشتہ داروں دس سالہ شعیب اور پندرہ سالہ شفیق کے ساتھ دریائے سندھ میں نہانے کے لیے گیا۔ شعیب اور شفیق واپس آگئے مگرکافی دیر تک تنویر واپس نہ آیاتو والدین کو تشویش ہوئی۔ شعیب اور شفیق کے ڈر کی وجہ سے پہلے بتانے سے انکار کرتے رہے ۔ کافی گھنٹوں بعد بتایا کہ تنویر دریائے سندھ میں ڈوب گیاہے۔ ڈوبنے والے بچے کے چچا غلام شبیر اور نوید عباس نے بتایاکہ ریسکیو 1122 والے بھی آئے مگر بچہ نہیں ملا۔ اور کئی گھنٹوں سے نیوی کی ٹیم ہماری مدد کررہی ہے۔نیوی کی ٹیم کے سپروائزر ایڈمن حبیب اللہ اور سپروائزر IWTDC محمد داؤد نے بتایاکہ ہم قریب ہی یہاں پنجاب گورنمنٹ کے تعاون سے دریائے سندھ پر ایک پراجیکٹ کررہے ہیں۔ ہمیں جیسے ہی معلوم ہوا تو ہمارے کمانڈر عبدالغفار چوہدری نے ہمیں فی الفور حکم دیاکہ متاثرہ خاندان کی حتیٰ المقدور مدد کی جائے۔ ہم کئی گھنٹوں سے بچے کی تلاش کررہے ہیں۔ کوثر حیات میرین، محمد زاہد میرین، شفیق احمد میرین، ساجد محمود بوٹ آپریٹر، وقاص احمد بوٹ آپریٹر اور محمد لطیف ہیلپر سمیت آٹھ افراد پر مشتمل ہماری ٹیم اس مشن میں حصہ لے رہی ہے۔ انہوں نے بتایاکہ دریائے سندھ کے پانی کی رفتار بہت تیز ہے اور نیچے جھاڑیاں وغیرہ بھی ہیں۔ جس کی وجہ سے کچھ مشکلات پیش آرہی ہیں۔ ہم zulo بوٹ اور جی آر پی بوٹس کے ذریعے گوریلا مشن سرانجام دے رہے ہیں۔ اب تک بچے کے زندہ رہنے کے امکانات تو نہیں ہیں البتہ اگر لاش یہاں نیچے مٹی یا جھاڑیوں میں پھنسی ہوئی تو جلد مل جائے گی۔ جناح بیراج کے گیٹس زیادہ پانی کی وجہ سے اوپر کردیئے گئے ہیں جس کی وجہ سے لاش کے بہہ جانے کا امکان بھی ہے۔تاحال بچے کی تلاش کا کام جاری ہے، لواحقین بھی بچے کی تلاش میں مصروف ہیں۔

یہ بھی پڑھیں  اوکاڑہ:یوم عاشورہ10 محرم الحرام کے موقع پرضلع میں کل 47 اورشہرسے 27 چھوٹے بڑے جلوس برآمدہوئے

یہ بھی پڑھیے :

Back to top button

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker