پاکستانسائنس و آئی ٹی

چودہ سالہ پاکستانی طالب علم نےسات کمپوٹرآپریٹنگ سسٹم بناکرعالمی ریکارڈ قائم کردیا

ایبٹ آباد (مانیٹرنگ ڈیسک) ارفع کریم کے بعداب ایبٹ آباد سے تعلق رکھنے والے کم عمر طالب علم نے چودہ سال کی عمرمیں مائیکرو سافٹ اورگوگل کے سرٹفیکیٹ اورسات کمپوٹرآپریٹنگ سسٹم بناکر پاکستان کیلئے عالمی ریکارڈ قائم کر دیاگیا۔ایبٹ آباد کے نواحی علاقہ بلال ٹاؤن سے تعلق رکھنے والے چودہ سالہ سکندر محمود بلوچ نے کمپو ٹرانجنئر نگ کی ایک سو سات زبانوں پر عبور حاصل کیا، اور اس کیساتھ ساتھ مائکرو سافٹ کی تمام اہم سر ٹفیکیٹس حاصل کرنے کےساتھ ساتھ گوگل کیلئے بھی کام کیاجس پر اسے پچیس سے زیادہ دنیا کی آئی ٹی کے اداروں کی جانب سے سر ٹفیکیٹ دئیے گے۔سکندر محمود بلوچ نویں جماعت کا طالب علم ہے ، اس نے (وی او ایس ون سے لے کر وی او ایس سات) تک کے لینکس آپر یٹنگ سسٹم تیارکئے ہیں، اس کے ساتھ ساتھ سکندر بلوچ نے اینٹی وائرس بھی تیار کر لیا ہے۔سکندر بلوچ نے نو سال کی عمر میں پہلا آپر یٹنگ سسٹم تیار کر کے عالمی ریکارڈ قائم کیا۔سکندر بلوچ بذریعہ نیٹ ایک روز میں کہیں ویب سائٹس کے ساتھ کام کرکے ایک گھنٹے میں ستر ڈالر کما رہا ہے۔ سکندر محمود بلوچ کا کہنا ہے کہ وہ(وی او ایس آٹھ ) آپر یٹنگ سسٹم میڈیکل کے طلباء کیلئے تیارکیا جا رہا ہے جس کے بننے کے بعد میڈیکل کے طلباء کو کتابوں کی ضرورت نہیں ہو گی

یہ بھی پڑھیں  کراچی: توہین آمیزخاکوں کیخلاف احتجاج، دوصحافی شدید زخمی

یہ بھی پڑھیے :

Back to top button

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker