تازہ ترینعلاقائی

لاہوز زون میں متعدد یوٹیلٹی سٹوز پر چھاپے سٹور انچارج سمیت سات ملازمین معطل

لاہور﴿نمائندہ خصوصی﴾یوٹیلٹی سٹورز کارپوریشن انتظامیہ نے اوورچارنگ کی شکایات پر نوٹس لیتے ہوئے لاہوز زون میں کے متعدد یوٹیلٹی سٹوز پر اچانک چھاپے مار کر ایک سٹور انچارج سمیت سات ملازمین کو معطل کر دیا ہے۔جبکہ مینجنگ ڈائریکٹر یوٹیلٹی سٹورز کارپوریشن میجر جنرل ﴿ر﴾ محمد فاروق نے خبردار دا ر کیا ہے کہ اوورچارجنگ اور بلیک میں سٹورز کی اشیائ فروخت کرنے میں ملوث پائے جانے ملازمین کے خلاف سخت سے سخت کاروائی عمل میں لائی جائے اورمقررہ نرخوں سے زائد قیمت پر سٹورز کی اشیائ فروخت کرنے والوں کے خلاف سخت سے سخت کاروائی عمل میں لائی جائے گی تاکہ اس ضمن میں حکومت کی طرف سے عوام کو دی جانے والے سبسڈی صحیح معنوں میں ان تک پہنچ سکے۔گزشتہ روز یوٹیلٹی سٹورز کارپویشن کی ویجیلنس ٹیموںنے ایم ڈی یوٹیلٹی سٹورز کارپویشن کی ہدایات پر لاہور زون میں واقع مختلف سٹورز پر اچانک چھاپے مار کر مقررہ نرخوں سے زائد قیمت پر اشیائ فروخت کرنے والے ملازمین کے حوالے سے اعلی حکام کو رپورٹ پیش کی جس پر ایم ڈی یوٹیلٹی سٹورز کارپوریشن نے فی الفور کاروائی کرتے ہوئے ملوث ملازمین کو معطل کے احکامات جاری کر دیئے ہیں۔ویجیلنس ٹیموں نے لاہور زون میں واقع مین مارکیٹ گُلبرگ سٹور،کیولری گرائونڈ سٹور،وائی بلاک ڈیفینس سٹور،ماڈل ٹائون سٹور،مین پلازہ، جوہر ٹائون،ریواز گارڈن سٹور،رچنا کمپلکس سٹوراچانک چھاپے مارے اور مقررہ قیمتوں سے زائد نرخوں پر سٹورز کی اشیائ فروخت کرنے والے ملازمین جن میں جاوید انور، حفیظ تنویر، مُحمّد ریاض، مُحمّد لطیف ، مُجاہد، اشرف طُور اور انچارج طلعت مسعود شامل ہیں کی رپورٹ اعلی حکام کو پیش کی جس پر ایم ڈی یوٹیلٹی سٹورز کارپویشن نے مذکورہ ملازمین کی فی الفور معطل کر کے اُن کے خلاف محکمانہ کاروائی کے احکامات جاری کردئیے ہیں۔ایم ڈی یوٹیلٹی سٹورز کارپوریشن نے لاہور زون کی زونل مینجر سمیت دیگر افسران کی بھی مذکورہ واقعہ پر سخت سرزنش کرتے ہوئے ان کو پورے زون میں چیک اینڈ بیلنس رکھنے کی ہدایات جاری کر دی ہیں۔ایم ڈی کاریشن نے واضح کیا ہے کہ آئندہ اس قسم کی کسی بھی الزام میں کوئی بھی ملازم ملوث پایا گیا تو اس کے خلاف سخت سے سخت کاروائی عمل میں لائی جائے گی اور متعلقہ سٹورانچارج کے خلاف بھی سخت کاروائی کی جائے گی۔انہوں نے مزید کہا ہے کہ یوٹیلٹی سٹور ز عوام کی سہولیات کے لئے قائم کیے گئے ہیں اور یہی وجہ ہے کہ ملک کے 05ہزار 811سٹورز کے لئے ایک ہی ریٹ مختص ہیں اور اگر اس کے باوجود کوئی اوورچارجنگ میں ملوث پایا جاتا ہے تو اس کو کسی صورت معاف نہیں کیا جائے گا تاکہ حکومت کی طرف عوام کو اس ضمن میں دی جانے والی سبسڈی صحیح معنوں میں ان تک پہنچ سکے۔

یہ بھی پڑھیے :

Back to top button
Close

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker