علاقائی

کراچی:ٹارگٹ کلنگ کے نتیجے میں جاں بحق ہونے والے سیاسی جماعتوں کے کارکنان اورعوام کےقتل کی پاکستان سنی تحریک پرزورمذمت کرتی ہے

کراچی ﴿ پریس ریلیز﴾ پاکستان سنی تحریک کے مرکزی رہنما محمد شکیل قادری نے کہا کہ شہر میں جاری ٹارگٹ کلنگ کے نتیجے میں جاں بحق ہونے والے سیاسی جماعتوں کے کارکنان اور عوام کے قتل کی پاکستان سنی تحریک پر زور مذمت کرتی ہے اور اس بات پر تشویش کا اظہار کرتی ہے کہ کراچی شہر کو ایک سوچی سمجھی سازش کے تحت لسانی فسادات کی طرف دھکیلا جارہا ہے جو کہ ملک کے وجود کے لیے نقصان دہ ہے۔ عوامی املاک کو نقصان پہنچانا ملک کو دیوالیہ کر دینے کے مترادف ہے کیوں کہ شہر کراچی سے ہی ملک کو 75 فی صدریونیوملتا ہے اور ایک دن شہر کراچی کے بند ہونے کے باعث تقریباً10 ارب سے زائد کا نقصان ہوتا ہے جس کی وجہ سے نہ صرف کراچی میں کاروبار زندگی متاثر ہوتا ہے بلکہ پورے ملک میں اس کا اثر ہوتا ہے۔ دنیا کے بیشتر ممالک میں جاکر امداد کے نام پر بھیک مانگنے سے بہتر ہے کہ اپنے ملک کو امن کا گہوارہ بنایا جائے تاکہ ملک معاشی طور پر مستحکم ہو سکے۔ روز روز کی ہڑتالوں کی وجہ سے ملک میں غربت بڑھ رہی ہے۔ جس کے باعث ایک عام آدمی کاجینامحال ہوگیا ہے۔ لوگ اپنے بچے بیچنے پر مجبور ہیں۔بھوک و افلاس میں مبتلا ہوکر خاندان خودکشیاں کرنے پر مجبور ہوںگئے ہیں اور ہمارے لیڈران پر امن احتجاج کرنے میں مصروف ہیں اگر یہ پر امن احتجاج ہے تو پھر اتنی جانوں کاضیائ اور عوامی املاک کو نقصان کس طرح پہنچتا ہے۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے مرکز اہل سنت پر جمشید روڈ اور گارڈن کے ذمہ داران اور کارکنان سے بات چیت کرتے ہوئے کیا۔ انہوں نے کہا کہ ریاست کا کام ہے کہ وہ عوام کی جان و مال کے تحفظ کو یقینی بنائے۔قانون نافذ کرنے والے اداروں کا زور صرف غریب اور محب وطن و قانون پسند لوگوں پر ہی چلتا ہے۔اتنے لوگوں کا قتل کرکے املا ک کو نقصان پہنچانے والے اسی زمین پر بستے ہیں قانون نافذ کرنے والے ادارے ان کو گرفتار کرنے میں بری طرح کیوں ناکام ہیں؟شر پسند عناصر شہر کی سڑکوں اور گلیوں میں دھندناتے پھررہے ہیںاس سے ظاہر ہوتا ہے کہ ریاستی ادارے اور حکومت سیاسی مصلحت پسندی کا شکار ہے۔اگر آپ اسی طرح سیاسی مصلحت پسندی کا شکار رہے تو ملک میںخانہ جنگی کا اندیشہ پیدا ہوسکتا ہے۔جس کی تمام تر ذمہ داری موجودہ نا اہل حکمرانوں پر عائد ہوتی ہے۔سندھ حکومت کو چاہیے کہ کراچی کے اس سلگتے مسائل پر فوری آل پارٹیز کانفرنس بلائی جائے تاکہ تمام پارٹی کے لیڈران مل بیٹھ کر کراچی کے تمام مسائل کو حل کرنے کے لیے کوئی راہ نکال سکیں۔ صرف حکومتی اتحادی پارٹیوں کی کور کمیٹی کا اجلاس بلانے سے مسائل نہ حل ہوئے ہیں اور نہ حل ہوں گے ضروری ہے کہ کراچی کے تمام اسٹیک ہولڈرز کو ایک میز پر بیٹھا کر مسائل کا حل تلاش کیا جائے۔انہوں نے کہا کہ جس کے گھر سے جنازہ اٹھتا ہے یہ وہی جانتے ہیں کہ ان پر کیا قیامت گزر گئی ہے ان کے والدین اور بچوں پر شفقت کا ہاتھ کون رکھے گا اور ان کی پرورش کوں کرے گا۔انہوں نے حکومت سے پر زور مطالبہ کیا کہ گزشتہ روز کے واقعات میں ہلاک ہونے والوں کے اہل خانہ کو انصاف اور مالی معاونت دی جائے جب کہ زخمیوں کا سرکاری خرچ پر اچھے سے اچھا علاج کرایا جائے اور جلائی جانے والی املاک کی منصفانہ تحقیقات کرا کے ان کے نقصان کا ازالہ کیا جائے۔ ایک تو مہنگائی آسمان سے بات کررہی ہے کسی خاندان کا واحد کفیل دہشت گردی کی نظر ہو جائے تو پھر بے حیائی اور اسٹریٹ کرائم میں اضافہ ہوتا ہے۔دہشت گرد تنظیمیں ان غریب لوگوں کے غربت کا فائدہ اٹھا کر کچھ پیسوں کا لالچ دے کر دہشت گردانہ کارروائی میں استعمال کرتے ہیں ۔اگر حکومت نے اس طرف فوری توجہ نہ دی تو ملک صومالیہ یا بیرو ت کی شکل اختیار نہ کرجائے۔انہوں نے دعا کرتے ہوئے کہا کہ اللہ عزوجل ان حادثات میں ہلاک ہونے والوں کی مغفرت فرمائے اور اپنے جوار رحمت میں جگہ عطا فرمائے اور لواحقین کو صبر وجمیل عطا فرمائے اور زخمیوں کو صحت کلی عطا فرمائے﴿آمین﴾#

یہ بھی پڑھیں  ڈسکہ:پرائیویٹ چیف ایگزیکٹو مقررکرنےکےخلاف گیپکوڈویژن کےتمام دفاتربندرہے

یہ بھی پڑھیے :

Back to top button

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker