پاکستانتازہ ترین

سندھ لوکل گورنمنٹ ایکٹ کیخلاف حکم امتناعی برقرار

supreme courtاسلام آباد(بیورو رپورٹ)سپریم کورٹ نے سندھ لوکل گورنمنٹ ایکٹ کیخلاف حکم امتناعی برقرار رکھتے ہوئے سماعت سولہ جنوری تک ملتوی کردی چیف جسٹس نے ریمارکس دیتے ہوئے کہا ہے کہ اپنی حکومت کو بتادیں حکم امتناعی ہے اس دوران کوئی گڑ بڑ نہیں ہونی چاہیے ۔ چیف جسٹس افتخار محمد چوہدری کی سربراہی میں تین رکنی بنچ کے روبرو سندھ لوکل گورنمنٹ کے وکیل انور منصور نے دلائل دیتے ہوئے کہا وہ علاج کی غرض سے برطانیہ جارہے ہیں لہذا عدالت اس مقدمے کی سماعت سولہ جنوری تک ملتوی کرے جس پرعدالت نے ان کی اس درخواست کومنظور کرتیوہئے یہ حکم لکھوایاکہ جو حکم امتناعی عدالت نے سندھ لوکل گورنمنٹ کیخلاف جاری کیا تھا کہ سندھ حکومت کوئی ڈیپارٹمنٹ لوکل گورنمنٹ کو منتقل نہ کرے اس دوران چیف جسٹس افتخارمحمد چوہدری نے انورمنصورخان سے مخاطب ہوتے ہوئے کہا کہ اپنی حکومت کو بتادیں کہ حکم امتناعی کے دوران کوئی گڑ بڑ نہیں ہونی چاہیے جس پرانور منصور نے کہا کہ اگر کوئی گڑ بڑ ہوئی تو وکالت چھوڑ دینگے چیف جسٹس کا کہنا تھا کہ آپ کو وکالت نام لینے کی کوئی ضرورت نہیں ہمیں پتہ ہے کہ ہمیں کیسے نمٹا ہے اس دوران درخواست گزارضمیر گھمرو نے عدالت سے درخواست کی اس مقدمے کا فیصلہ نگران حکومت کی تشکیل سے قبل ہونا انتہائی ضروری ہے تاہم اس عدالت نے سندھ لوکل گورنمنٹ ایکٹ کیخلاف حکم امتناعی برقرار رکھتے ہوئے ایڈووکیٹ جنرل سندھ سے کہا کہ وہ یہ حکم تمام متعلقہ حکام کوبتا دیں عدالت نے بعد ازاں سماعت سولہ جنوری تک ملتوی کردی

یہ بھی پڑھیں  پانامہ کیس : سپریم کورٹ کے گرد اضافی خاردار تاریں لگا دی گئیں

یہ بھی پڑھیے :

Back to top button

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker