پاکستانتازہ ترین

سپریم کورٹ نے پورٹ قاسم اتھارٹی میں بے ضابطگیوں کیلئے5رکنی لارجربینچ تشکیل دیدیا

supreme-court-pakistan3اسلام آباد(بیورو رپورٹ) سپریم کورٹ نے پورٹ قاسم اتھارٹی میں بے ضابطگیوں سے متعلق کیس کی سماعت کے لیے پانچ رکنی لارجر بینچ تشکیل دیا ہے جبکہ اگلی سماعت کے لیے 9 جنوری کی تاریخ مقرر کی گئی ہے ۔ سپریم کورٹ میں پورٹ قاسم اتھاٹری کے معزول سیکرٹری عبدالجبار میمن کی جانب سے جمع کرائے گئے پٹیشن پر کیس کی سماعت ہوئی انہوں نے عدالت سے استدعا کی کہ مفاد عامہ کا معاملہ ہے اس لئے اس مقدمے کی سماعت کے لیے لارجر بینچ تشکیل دیا جائے سابق سیکرٹری پی کیو اے نے اتھارٹی غیر قانونی بھرتیوں کیخلاف سپریم کورٹ میں ان کی پٹیشن کی سماعت کے لیے چیف جسٹس افتخار محمد چوہدری کی سربراہی میں جسٹس خلجی عارف حسین ، جسٹس گلزار احمد اور جسٹس شیخ عظمت سعید شامل ہوں گے اس سے قبل ہونے والی سماعت میں عدالت نے اٹارنی جنرل سیکرٹری پورٹ قاسم اتھارٹی ، سیکرٹری اسٹیبلشمنٹ ڈویژن ا ور سیکرٹری فورٹ اینڈ شپنگ کو دو ہفتوں میں غیر قانونی بھرتیوں کے بارے میں حکومت کا موقف پیش کرنے کی ہدایت کی تھی پٹیشنر عبدالجبار میمن نے عدالت کو بتایا کہ حال ہی میں اتھارٹی کے اندر گرٹو سے لے کر گریڈ 19 تک عہدوں پر ڈھائی سو افراد کو بھرتی کیا گیا ہے اس کے باوجود کہ عدالت نے اکتیس جنوری 2010ء سے اس پر سٹے آرڈرز رہے ہیں اس لئے یہ معاملہ توہین عدالت کے زمرے میں آتا ہے درخواست گزار نے موقف اختیار کیا ہے کہ چیئرمین پی کیو اے ایئر ایڈمرل ریٹائرڈ محمد شفیع کو مدت ملازمت میں توسیع دی گئی ہے جو کہ ایک سوالیہ نشان ہے انہوں نے سپریم کورٹ کو آگاہ کیا دائر تجارت مخدوم امین فہیم کے بردار نسبتی محمد ضمیر فاروقی کو پورٹ قاسم اتھارٹی میں تعینات کیا گیا اور پھر اس کو ڈیپوٹیشن پر ایف آئی اے میں اسسٹنٹ ڈائریکٹر تعینات کیا گیا ہے

یہ بھی پڑھیں  پاکستان میں اردو ہائیکو کے بانی ڈاکٹر محمد امین

یہ بھی پڑھیے :

Back to top button

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker