پاکستانتازہ ترین

’’ جمہوری حق چھیناگیاتوچوڑیاں نہیں پہن رکھیں ‘‘میرےساتھ خدا کی ذات اورعوام ہیں، طاہرالقادری

tahir-ul-qadriلاہور(نمائندہ خصوصی) تحریک منہاج القرآن کے سربراہ پروفیسر ڈاکٹر محمد طاہر القادری نے کہا ہے کہ میرے ساتھ امریکہ ، برطانیہ یا کوئی اور نہیں خدا کی ذات اور پھر عوام ہیں ، طالبان کہہ چکے ہیں کہ ان کے نظریاتی اختلاف ضرور ہیں لیکن کوئی دھمکی نہیں دی ، اب اگر کچھ ہوا تو صدر زرداری ، وفاقی حکومت اور پنجاب کے حکمران ذمہ دار ہوں گے جن پر قوم کے سامنے آج ایف آئی آر درج کرا رہا ہوں ، عوام حقوق کے لیے نکل پڑے ہیں تو مرتے دم تک واپس نہیں آئیں گے،’’ جمہوری حق چھینا گیا تو چوڑیاں نہیں پہن رکھیں ‘‘ ۔ لاہور میں امین شہیدی سے ملاقات کے بعد میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے علامہ طاہر القادری نے کہا کہ پوری دنیا میں پرامن احتجاج ہوتا ہے اور ہم بھی پرامن احتجاج کی بات کررہے ہیں لیکن ہمیں اطلاع ملی ہے کہ لاہور سے اسلام آباد جانے والے راستوں میں کنٹینر لگا کر راستے بلاک کیے جارہے ہیں اور اسلام آباد میں بھی راستوں میں کنٹینر کھڑے کئے جارہے ہیں ۔ انہوں نے کہا کہ رحمان ملک گزشتہ روز کہہ چکے ہیں کہ میرا کوئی مطالبہ ماورائے آئین نہیں لیکن مجھ سمیت 200 افراد کی نظر بندی کا فیصلہ کیا گیا ہے ہمیں گرفتاریوں سے خوف نہیں لیکن اگر ایسا ہوا تو پھر لاکھوں کا مجمع بپھر جائے گا اور امن وامان کی خرابی کی تمام تر ذمہ داری وفاقی اور پنجاب حکومت پر ہوگی ۔ انہوں نے کہا کہ لوگ حالات سے تنگ ہیں وہ مرنے پر آگئے ہیں قوم چاہتی ہے کہ گھر بیٹھے بم سے مرنے سے بہتر ہے گولیوں سے مر جائیں اس لیے جو لوگ اپنا حق لینے کیلئے نکلے ہیں وہ اب واپس نہیں آئیں گے انہوں نے کہا کہ حکومت غیر جمہوری اور سازشی ہتھکنڈوں کو نہ اپنائے اور مارچ پرامن رہنے دیں طاہر القادری نے کہا کہ امریکہ اور برطانیہ نے کہہ دیا کہ وہ ہمارے پیچھے نہیں اسٹیبلشمنٹ نے بھی کہہ دیا ہے کہ وہ پیچھے نہیں میرے پیچھے کوئی اور نہیں خدا کی ذات ہے میرے ساتھ اٹھارہ کروڑ غریبوں اور مظلوموں کی مدد ہے ۔ انہوں نے کہا کہ طالبان نے بھی کہہ دیا ہے کہ ہم نے کوئی دھمکی نہیں دی ہمارے ان سے نظریاتی اختلاف ضرور ہیں ہمارے ساتھ جھوٹا بیان منسوب کیا گیا ہے اس لئے اگر کچھ ہوا تو اس کے ذمہ دار آصف علی زرداری ، وزیراعظم راجہ پرویز اشرف ، وفاقی حکومت اور پنجاب حکومت کے حکمران ہوں گے اور قوم کے سامنے میں آج ہی ایف آئی آر درج کروا رہا ہوں ۔ انہوں نے کہا کہ کنٹینر لگائے جائیں یا نظر بندی ہو لاکھوں لوگوں کو کوئی روک نہیں سکتا اور میں خود لیڈ کرتے ہوئے اسلام آباد جاؤں گا انہوں نے کہا کہ تحریک منہاج القرآن غیر سیاسی تحریک ہے اور اس وقت ہماری جدوجہد عوام کے حق کے لیے ہے اب ساز باز کے فیصلے نہیں ہوں گے انہوں نے کہا کہ پارلیمنٹ کے وجود کا کوئی آئینی جواز نہیں اور اس کے بارے میں اپنی پریس بریفنگ میں تفصیل سے بات کروں گا ۔ ایک سوال کے جواب میں کہا کہ ہماری جماعت پاکستان عوامی تحریک 1989ء سے رجسٹرڈ ہے انتخابات کا وقت آیا تو یہ بھی سامنے آجائے گا

یہ بھی پڑھیں  صحافی کامران افضال کی پہلی برسی کے موقع پرڈسکہ کے صحافیوں اورسول سوسائٹی کی ریلی

یہ بھی پڑھیے :

Back to top button

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker