پاکستانتازہ ترین

مذاکرات کے مقام پر کوئی اختلاف نہیں ، طالبان

پشاور (مانیٹرنگ ڈیسک)حکومت کے ساتھ مذاکرات کیلئے طالبان کی طرف سے نامزد کمیٹی نے کہاہے کہ طالبان شوریٰ سے رابطے میں ہیں ، مذاکرات کیلئے جگہ کے تعین کے بارے میں غور جاری ہے ، محسود کے علاقے میں مذاکرات کامیاب ہوسکتے ہیں ، جگہ کے تعین کے بعد حکومتی اور طالبان کمیٹی کی ملاقات متوقع ہے ، جگہ کے تعین کے بارے میں کوئی اختلاف نہیں،مذاکرات ناکام بنانے کیلئے خفیہ ہاتھ دہشتگردی کی کارروائیوں میں ملوث ہے، طالبان احرارالہند کے بارے میں تحقیقات کررہے ہیں ، یقین دہانی کرائی ہے کہ کمیٹی کو مشکل میں نہیں ڈالیں گے ۔ نجی ٹی وی چینل سے گفتگو اور پریس کانفرنس سے خطاب میں پروفیسر ابراہیم نے جگہ کے تعین کے بارے میں حکومت اورطالبان کے درمیان ڈیڈلاک کے حوالے سے سامنے آنیوالی خبروں کی تردید کرتے ہوئے بتایاکہ امن مذاکرات کاعمل کامیابی سے جاری ہے ، مقام کے تعین کے بارے میں رابطہ ہورہاہے ، طالبان نے بھی کچھ تجاویز دی ہیں اور مقام کے تعین کے بعد جلد ہی طالبان اور حکومتی کمیٹی میں رابطہ ہوجائے گا۔ اُنہوں نے مطالبہ کیاہے جیلوں میں قید بچوں اور خواتین کورہاکیاجائے ، طالبان کی طرف سے موصول ہونیوالی تجاویز حکومت کوپیش کردی ہیں اور اب حکومتی کمیٹی کی جوابی تجاویز کا انتظار ہے ۔سوالات کے جواب میں اُن کاکہناتھاکہ محسود قبائل کے علاقے میں مذاکرات کامیاب ہوسکتے ہیں ، طالبان بھی احرار الہند کے بارے میں تحقیقات کررہے ہیں ، مذاکرات ناکام بنانے کیلئے خفیہ ہاتھ ملوث ہیں ، طالبان نے یقین دہانی کرائی تھی کہ کمیٹی کو مشکلات میں نہیں ڈالیں گے ۔طالبان کمیٹی کے کوارڈینیٹریوسف شاہ نے بتایاکہ طالبان شوریٰ سے مسلسل رابطے میں ہیں ، جگہ کے تعین کے بارے میں مشاورت ہورہی ہے ۔

یہ بھی پڑھیں  زندگی کے آثار

یہ بھی پڑھیے :

Back to top button

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker