شہ سرخیاں
بنیادی صفحہ / تازہ ترین / ٹیکسلا: یونین کونسل جلالہ حکومتی زعماء کی عدم توجہ مکینوں کے لئے وبال جان بن گئی

ٹیکسلا: یونین کونسل جلالہ حکومتی زعماء کی عدم توجہ مکینوں کے لئے وبال جان بن گئی

ٹیکسلا ( ڈاکٹر سید صابر علی سے) یونین کونسل جلالہ حکومتی زعماء کی عدم توجہ مکینوں کے لئے وبال جان بن گئی،نکاسی آب کی عدم دستیابی سیوریج کا گندا پانی گلیوں میں تلاب کا منظر پیش کرنے لگا،سڑک کی ٹوٹ پھوٹ حادثات کا موجب بننے لگی،بارشوں میں سڑک پر کئی کئی فٹ پانی جمع ہوجاتا ہے ، لوگوں کا گزرنا محال ہوجاتا ہے ،سکول کے بچوں کا سکول جانا محال ہوجاتا ہے، ہزاروں نفوس پر مشتمل آبادی حسین آبادکے مکینوں کو بے یار مددگار چھوڑ دیا گیا،سیاسی چپقلش نے صورتحال کو مزید گھبیر بنادیا ہے،پی ٹی آئی کے منتخب ہونے والے کونسلران ، چئیرمین یونین کونسل بے بسی کی تصویر بن گئے ہیں،کس کے پاس جائیں کسے اپنی فریاد سنائیں،الیکشن میں بلند و بانگ دعوئے کئے گئے جیتنے کے بعد یہاں کے مکینوں کو بے یارو مددگار چھوڑ دیا گیا، حکومتی زعماء علاقہ مکینوں سے سوتیلی ماں جیسا سلوک کر رہے ہیں،اہل علاقہ میڈیا کے سامنے پھٹ پڑے،ارباب اختیار سے مکینوں کو درپیش مسائل حل کرنے کا مطالبہ،تفصیلات کے مطابق یونین کونسل جلالہ کے وارڈ نمبر دو جہاں سے بلدیاتی الیکشن میں پی ٹی آئی کے نمائندے کامیاب ہوئے،جبکہ یو سی کا چئیرمین بھی پی ٹی آئی کے ملک ثاقب ممتاز بنے،حسین آباد کے مکینوں سید محمد حسن شاہ،ڈاکٹر عمیر شبیر،سید محسن شاہ،حاجی نصیر،حاجی بنارس ،عمر خان،عمیر خان،بابا یامین،امجد خان،سید شاہ حسین،سید مقدر حسین شاہ ،نوران شاہ و دیگر نے سروئے کے دوران میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے بتایا کہ حسین آباد جو کہ ہزاروں نفوس پر مشتمل آبادی ہے ، عرصہ دراز سے سڑک ٹوٹ پھوٹ کا شکار ہے جگہ جگہ بڑے بڑے گڑھے پڑے ہوئے ہیں،بارشوں میں علاقہ تالاب کا منظر پیش کرتا ہے کئی کئی فٹ پانی سڑک پر کھڑا ہوجاتا ہے ،سکول کے بچوں کا سکول جانا محال ہوتا ہے میڈیا کو بتایا گیا کہ مذکورہ سڑک کئی دیہاتوں کو ملانے والی واحد گذر گاہ ہے ملی بھگت سے جمیل آباد اور ملحقہ آبادیوں کا سیوریج کا پانی اس علاقہ میں ڈال دیا گیا جبکہ یہاں نکاسی آباد کا کوء بندوبست بھی نہیں کیا گیا،سیوریج کا گند اپانی نکاسی آب نہ ہونے کی وجہ سے مکینوں کے لئے عذاب بن چکا ہے،بلدیاتی الیکشن سے قبل ہم سے مسائل حل کرنے کا وعدہ کیا گیا جو بعد میں جیتنے کے بعد یہاں کے نمائندے بھول گئے،اور مکینوں کو بے یار مددگار چھوڑ دیا گیا، میڈیا کو بتایا گیا کہ حسین آباد سے گزرنے والی سڑک سے متعدد دیہات لنک ہوتے ہیں جس میں ڈھوک سیدو،جلالہ،بن بھولا،مارگلہ،ٹھٹہ خلیل، بھلوٹ و دیگر شامل ہیں ،حسین آباد سے گزرنے والی سڑک انھیں ملانے والی واحد گزر گاہ ہے جس کی مرمتی ، پختگی پر کوئی توجہ نہیں دی جارہی، جبکہ نکاسی آب کے لئے علاقہ میں نالے بھی نہیں بنائے گئے جس سے اہل علاقہ سخت مصیبت سے دوچار ہیں،حکومتی زعماء مکینوں کے ساتھ سوتیلی ماں جیسا سلوک کر رہے ہیں،مکینوں نے مطالبہ کیا کہ مکینوں کو درپیش مسائل سے چھٹکارا دلانے کے لئے ارباب اختیار ٹھوس اقدامات کریں ،مکینوں کو پی ٹی آئی کو کامیاب کرنے کی سزا نہیں دینی چاہئے،ہمارے ساتھ جو مشکل وقت میں کھڑا ہوگا اہل علاقہ اسے اپنا نجات دھندہ سمجھیں گے،

یہ بھی پڑھیں  ۔،۔ داغدار ۔،