تازہ ترینعلاقائی

ٹیکسلا:محمد اقبال خان نہ صرف ایک بااصول وکیل تھے بلکہ وہ ایک باوفا دوست بھی تھے، ٹیکسلا بارایسوسی ایشن

ٹیکسلا(ڈاکٹر سید صابر علی سے )ٹیکسلا بار ایسوسی ایشن کے صدر راجہ غلام مرتضیٰ ایڈووکیٹ نے کہا ہے کہ محمد اقبال خان نہ صرف ایک با اصول وکیل تھے بلکہ وہ ایک با وفا دوست بھی تھے جنہوں نے تمام زندگی اصولوں کی پاسداری میں گزاری، ٹیکسلا کو سب ڈویژن کا درجہ دلوانے میں بھی (مرحوم )کا بنیادی کردار تھا، وہ نہ صرف ٹیکسلا بار کے بانی تھے بلکہ انکی پریکٹس وکلاء کے لئے مشعل راہ ہے ،وکلاء برادری کی فلاح و بہبود کے لئے انکی خدمات کو ہمیشہ سنہری الفاظ میں یاد رکھا جائے گا،وکلاء برادری ایک مشفق انسان سے محروم ہوگئی ہے انکا خلاء تمام زندگی پورا نہیں ہوسکتا،ان خیالات کا اظہار انھوں نے ٹیکسلا بار کے بانی رکن تنویر اقبال ایڈووکیٹ،ناصر اقبال ایڈووکیٹ، طاہر اقبال ایڈووکیٹ ، اور عامر اقبال برادران کے والد محمد اقبال خان (مرحوم) کی خدمات کے اعتراف میں بار کی جانب سے منعقدہ تعزیتی ریفرنس سے خطاب کے دوران کیا تقریب سے سابق صدور بار ایسوسی ایشن سید رضا عباس ایڈووکیٹ، عبدالمالک شیرپاؤایڈووکیٹ،اعجاز احمد خان ایڈووکیٹ، خواجہ امتیاز ایڈووکیٹ،ٹیکسلا بار کے جنرل سیکر ٹری سید مبشر حسین نقوی، سابق جنرل سیکر ٹری سید رضوان حیدر،اور (مرحوم) محمد اقبال خان کے فرزند تنویر احمد خان ایڈووکیٹ نے بھی خطاب کیا ، مقررین کا کہنا تھا کہ اقبال خان اخلاق کے پیکر اور درد دل رکھنے والے مشفق انسان تھے ،وہ آج بھی ہمارے دلوں میں زندہ ہیں،انکی خوبصورت یادیں زندہ ہیں، اقبال خان مرحوم کی یاد میں پڑھے گئے شعر پر ماحول سوگوار ہوگیا ہر آنکھ اشک بار تھی ’ بچھڑا کچھ اس ادا سے کہ رت ہی بدل گئی ’وہ ایک شخص سارے شہر کو ویران کرگیا،اس موقع پر سید غیاث الدین ایڈووکیٹ ، طاہر اقبال خان ایڈوکیٹ، ناصر اقبال خان ایڈوکیٹ،سید رفاقت شاہ ایڈووکیٹ، سابق جسٹس سید انتخاب حسین شاہ ایڈووکیٹ، طاہر محمود راجہ ایڈووکیٹ، سید ناظم شاہ ایڈووکیٹ،شاہد محمود ایڈووکیٹ،زہین اختر صدیقی ایڈووکیٹ،محمد منیر خان ایڈووکیٹ،جاوید اقبال منگرال ایڈووکیٹ،عبد الغفور ساقی ایڈووکیٹ، ملک خالد شہزاد ایڈووکیٹ،ملک سجاد ایڈووکیٹ، ملک اجمل ایڈووکیٹ، سعد مغل ایڈووکیٹ،سید گفتار شاہ ایڈووکیٹ،سید اکرار شاہ ایڈووکیٹ،ملک محمد مدبر کہوٹ ایڈووکیٹ، جمیل اصغر بٹ ایڈووکیٹ، راجہ محمد صادق ایڈووکیٹ، ملک اعجاز طاہر ایڈووکیٹ،الطاف حسین کہوٹ ایڈووکیٹ،شیر محمد تنولی ایڈووکیٹ،راجہ کامران ایڈووکیٹ،افضل جنجوعہ ایڈووکیٹ،محمد علی ایڈووکیٹ،راجہ کامران ایڈووکیٹ،شفقت ایزدی راجپوت ایڈووکیٹ،رفاقت شاہ ایڈووکیٹ،ملک نعمان اسلم ایڈووکیٹ،نور محمد ایڈووکیٹ،علی حیدری ایڈووکیٹ،آفتاب ایڈووکیٹ،چوہدری عرفان ایڈووکیٹ،نذیر شاہ ایڈووکیٹ،سمیت دیگر بار ممبران و لیڈی ممبران نے بھرپور شرکت کی ،مقررین نے طاہر اقبال خان ایڈووکیٹ ،ناصر اقبال خان ایڈووکیٹ اور تنویر احمد خان ایڈووکیٹ کے والد محترم (مرحوم)محمد اقبال خان کی زندگی پر مفصل روشنی ڈالی، تنویر اقبال نے والد مرحوم کی سماجی ، فلاحی اورپیشہ ورانہ خدمات کو اپنے اور اہل خانہ کے لئے قابل فخر قرار دیا ،جنرل سیکر ٹری ٹیکسلا بار ایسوسی ایشن سید مبشر حسین نقوی نے (مرحوم) کو زبردست الفاظ میں خراج تحسین پیش کیا، اس موقع پر تجویز پیش کی گئی کہ مرحوم کی خدمات کے اعتراف میں انکا پورٹریٹ ٹیکسلا بار میں آویزاں کیا جائے ،ٹیکسلا(ڈاکٹر سید صابر علی سے )ٹیکسلا بار ایسوسی ایشن کے صدر راجہ غلام مرتضیٰ ایڈووکیٹ نے کہا ہے کہ محمد اقبال خان نہ صرف ایک با اصول وکیل تھے بلکہ وہ ایک با وفا دوست بھی تھے جنہوں نے تمام زندگی اصولوں کی پاسداری میں گزاری، ٹیکسلا کو سب ڈویژن کا درجہ دلوانے میں بھی (مرحوم )کا بنیادی کردار تھا، وہ نہ صرف ٹیکسلا بار کے بانی تھے بلکہ انکی پریکٹس وکلاء کے لئے مشعل راہ ہے ،وکلاء برادری کی فلاح و بہبود کے لئے انکی خدمات کو ہمیشہ سنہری الفاظ میں یاد رکھا جائے گا،وکلاء برادری ایک مشفق انسان سے محروم ہوگئی ہے انکا خلاء تمام زندگی پورا نہیں ہوسکتا،ان خیالات کا اظہار انھوں نے ٹیکسلا بار کے بانی رکن تنویر اقبال ایڈووکیٹ،ناصر اقبال ایڈووکیٹ، طاہر اقبال ایڈووکیٹ ، اور عامر اقبال برادران کے والد محمد اقبال خان (مرحوم) کی خدمات کے اعتراف میں بار کی جانب سے منعقدہ تعزیتی ریفرنس سے خطاب کے دوران کیا تقریب سے سابق صدور بار ایسوسی ایشن سید رضا عباس ایڈووکیٹ، عبدالمالک شیرپاؤایڈووکیٹ،اعجاز احمد خان ایڈووکیٹ، خواجہ امتیاز ایڈووکیٹ،ٹیکسلا بار کے جنرل سیکر ٹری سید مبشر حسین نقوی، سابق جنرل سیکر ٹری سید رضوان حیدر،اور (مرحوم) محمد اقبال خان کے فرزند تنویر احمد خان ایڈووکیٹ نے بھی خطاب کیا ، مقررین کا کہنا تھا کہ اقبال خان اخلاق کے پیکر اور درد دل رکھنے والے مشفق انسان تھے ،وہ آج بھی ہمارے دلوں میں زندہ ہیں،انکی خوبصورت یادیں زندہ ہیں، اقبال خان مرحوم کی یاد میں پڑھے گئے شعر پر ماحول سوگوار ہوگیا ہر آنکھ اشک بار تھی ’ بچھڑا کچھ اس ادا سے کہ رت ہی بدل گئی ’وہ ایک شخص سارے شہر کو ویران کرگیا،اس موقع پر سید غیاث الدین ایڈووکیٹ ، طاہر اقبال خان ایڈوکیٹ، ناصر اقبال خان ایڈوکیٹ،سید رفاقت شاہ ایڈووکیٹ، سابق جسٹس سید انتخاب حسین شاہ ایڈووکیٹ، طاہر محمود راجہ ایڈووکیٹ، سید ناظم شاہ ایڈووکیٹ،شاہد محمود ایڈووکیٹ،زہین اختر صدیقی ایڈووکیٹ،محمد منیر خان ایڈووکیٹ،جاوید اقبال منگرال ایڈووکیٹ،عبد الغفور ساقی ایڈووکیٹ، ملک خالد شہزاد ایڈووکیٹ،ملک سجاد ایڈووکیٹ، ملک اجمل ایڈووکیٹ، سعد مغل ایڈووکیٹ،سید گفتار شاہ ایڈووکیٹ،سید اکرار شاہ ایڈووکیٹ،ملک محمد مدبر کہوٹ ایڈووکیٹ، جمیل اصغر بٹ ایڈووکیٹ، راجہ محمد صادق ایڈووکیٹ، ملک اعجاز طاہر ایڈووکیٹ،الطاف حسین کہوٹ ایڈووکیٹ،شیر محمد تنولی ایڈووکیٹ،راجہ کامران ایڈووکیٹ،افضل جنجوعہ ایڈووکیٹ،محمد علی ایڈووکیٹ،راجہ کامران ایڈووکیٹ،شفقت ایزدی راجپوت ایڈووکیٹ،رفاقت شاہ ایڈووکیٹ،ملک نعمان اسلم ایڈووکیٹ،نور محمد ایڈووکیٹ،علی حیدری ایڈووکیٹ،آفتاب ایڈووکیٹ،چوہدری عرفان ایڈووکیٹ،نذیر شاہ ایڈووکیٹ،سمیت دیگر بار ممبران و لیڈی ممبران نے بھرپور شرکت کی ،مقررین نے طاہر اقبال خان ایڈووکیٹ ،ناصر اقبال خان ایڈووکیٹ اور تنویر احمد خان ایڈووکیٹ کے والد محترم (مرحوم)محمد اقبال خان کی زندگی پر مفصل روشنی ڈالی، تنویر اقبال نے والد مرحوم کی سماجی ، فلاحی اورپیشہ ورانہ خدمات کو اپنے اور اہل خانہ کے لئے قابل فخر قرار دیا ،جنرل سیکر ٹری ٹیکسلا بار ایسوسی ایشن سید مبشر حسین نقوی نے (مرحوم) کو زبردست الفاظ میں خراج تحسین پیش کیا، اس موقع پر تجویز پیش کی گئی کہ مرحوم کی خدمات کے اعتراف میں انکا پورٹریٹ ٹیکسلا بار میں آویزاں کیا جائے ،

یہ بھی پڑھیے :

Back to top button
error: Content is Protected!!