تازہ ترینعلاقائی

پولیس تھانہ ٹیکسلا کا کمانڈو ایکشن ،پولیس وردی میں ملبوس جعلی سب انسپکٹر رنگے ہاتھوں گرفتار

ٹیکسلا ( ڈاکٹر سید صابر علی / نا مہ نگار)پولیس تھانہ ٹیکسلا کا کمانڈو ایکشن ،پولیس وردی میں ملبوس جعلی سب انسپکٹر رنگے ہاتھوں گرفتار، قبضہ سے چوری شدہ گاڑی بھی برآمد،ملزم بیس سے زائد ڈکیتیوں کی وارداتوں میں میں ملوث ہے، لاہور کے مختلف تھانوں میں سنگین نوعیت کے مقدمات درج ہیں، ڈی ایس پی ٹیکسلا سرکل ملک ارشاد کی میڈیا سے گفتگو،دوران تفتیش ڈکیتی ، راہزنی اور گاڑیوں کی چوریوں کی متعدد وارداتوں کاانکشاف،گینگ میں شامل دیگر افراد کی گرفتاری کے لئے پولیس کے چھاپے،عوامی حلقوں کی جانب سے فرض شناس افسر ایس آئی سکندر خان کو خراج تحسین پولیس کے اعلیٰ افسران سے تعریفی سند اور انعام دینے کا مطالبہ ،واہ کینٹ ٹیکسلا میں لوگوں کو لوٹنے کی متعدد وارداتیں پولیس کے روپ میں رونما ہوچکی ہیں،جس کا آج تک کوئی سراغ نہیں مل سکا،پکڑے جانے والے سب انسپکٹر نے پنجاب پولیس کا جعلی آئی ڈی کارڈ بھی بنا رکھ اتھا،مشکوک پا کر پوچھ گچھ کی گئی، جعلی سب انسپکٹر چوری شدہ گاڑی پشاور فروخت کرنے جارہا تھا ،حالات کی سنگینی بھانپتے ہوئے ساتھی موقع سے فرار ،تفصیلات کے مطابق تھانہ ٹیکسلا میں تعیناتی سب انسپکٹر سکندر خان گشت پر تھے کہ موٹر وے سروس روڈ پر قیام و طعام ہوٹل پر کھڑے پولیس وردی میں ملبوس ایک سب انسپکٹر کوگاڑی میں مشکوک پا کر اسکی جانچ پڑتال کی، سوال و جواب پر مذکورہ سب انسپکٹر سٹ پٹا گیا۔جبکہ اس دوران اسکا ساتھی آصف نامی شخص موقع کی نذاکت کو بھانتے ہوئے موقع سے فرار ہوگیا،شناخت کرنے پر معلوم ہوا کہ اسکا نام اظہر حسین ولد محمد حسین ہے اور مذکورہ شخص لاہور کارہائشی ہے، جبکہ عرصہ دراز سے پولیس وردی میں متعدد وارداتوں کا ارتکاب کر چکاہے ،سب انسپکٹر سکندر خان للہ نے جعلی سب انسپکٹر کو گرفتار کر کے اس کے قبضہ سے چوری شدہ مہران کار نمبری LEA-5336 بھی برآمد کرلی،جو کہ ایک روز قبل لاہور سے چوری ہوئی تھی،ابتدائی تفتیش میں جعلی سب انسپکٹر نے متعدد چوریوں ، ڈکیتیوں اور راہزنی ، گاڑی چوری کی وارداتوں کا انکشاف کیا ،جبکہ گینگ میں شامل افراد کی تفصیلات بھی بتائیں،اسکا کہنا تھا کہ اس نے یہ گاڑی لاہور سے چوری کی ہے اور اب اسے پشاور فروخت کرنے جارہا تھا،جعلی سب انسپکٹر نے پنجاب پولیس کا جعلی آئی ڈی کارڈ بھی بنا رکھا تھا جو پولیس نے قبضہ میں لے لیا،تفتیشی آفیسر تھانہ ٹیکسلا سب انسپکٹر سکندر خان للہ کے مطابق گینگ کے دیگر افراد کی گرفتاری کے لئے ٹیمیں تشکیل دے دی گئیں ہیں،جبکہ مذید سنسنی خیز انکشافات کی توقع ہے،یاد رہے کہ واہ کینٹ ٹیکسلا میں قبل ازیں شہریوں کو لوٹنے کی متعدد وارداتیں پولیس وردی میں ملبوس افراد کے حوالے سے رونما ہوچکی ہیں،پولیس وردی میں ملبوس جعلی پولیس سب انسپکٹر کی گرفتاری بلاشبہ پولیس کا احسن اقدام ہے ، عوامی حلقوں نے پولیس کی کارکردگی پر فرض شناس پولیس آفیسر سب انسپکٹر سکندر خان للہ کو تعریفی سند اور نعام دینے کا مطالبہ کیا ہے ، پولیس نے ملزم کے خلاف قانونی کاروائی کرتے ہوئے زیر دفعات411,170,171,420,468 کے تحت مقدمہ درج کر کے تفتیش کا آغاز کردیا،

یہ بھی پڑھیے :

Back to top button