تازہ ترینکھیل

پاکستانی بلے بازوں کی شاندار کارکردگی، ٹیم کو یقینی شکست سے بچا لیا

کراچی(پاک نیوز)پاکستانی بلے بازوں کی شاندار کارکردگی نے ٹیم کو یقینی شکست سے بچا لیا،پاکستان اور آسٹریلیا کے درمیان کراچی ٹیسٹ ڈراہو گیا۔sقومی ٹیم نے 506 رنز کے ہدف کے تعاقب میں سات وکٹوں پر 443 رنز بناسکی اور یہ میچ بھی راولپنڈی ٹیسٹ کی طرح بغیر نتیجہ ختم ہوگیا۔گرین کیپس کے کپتان بابر اعظم 196 رنز کی دفاعی اننگز کھیل کر پویلین لوٹ گئے اور وہ بدقسمتی سے صرف 4 سکور کے فرق سے اپنی ڈبل سنچری نہ مکمل کرسکے۔وکٹ کیپر بلے باز محمد رضوان نے شاندار بلے بازی کا مظاہرہ کرتے ہوئے اپنے ٹیسٹ کیریئر کی دوسری سنچری سکور کی۔< کپتان بابر اعظم اور عبداللہ شفیق نے 192 رنز 2 وکٹوں کے نقصان پر آج کھیل کا آغاز کیا، 249 کے سکور پرعبداللہ شفیق نروس نائنٹی کا شکار ہو کرکمنز کے ہاتھوں آؤٹ ہوئے، ان کا کیچ سمتھ نے پکڑا، فواد عالم محض 9 رنز بنا سکے، فہیم اشرف صفر اور ساجد خان 9 رنز پر آؤٹ ہوگئے۔گذشتہ روز آسٹریلیا نے 97 رنز پر دوسری اننگز بھی ڈکلئیر کر دی تھی، کینگروز بلے باز عثمان خواجہ اور مارنس لبوشین 44، 44 رنز بنا کر نمایاں رہے۔ دوسری اننگز میں پاکستانی بلے باز امام الحق صرف ایک جبکہ اظہر علی 6 رنز بنا کر پویلین لوٹ گئے تھے۔یاد رہے پاکستانی ٹیم پہلی اننگز میں صرف ایک سو اڑتالیس رنز بنا کر آؤٹ ہوگئی تھی۔واضح رہے کہ بابراعظم نے ٹیسٹ کرکٹ میں کئی ریکارڈ توڑ ڈالے ،بابراعظم چوتھی اننگز میں سب سے زیادہ رنز بنانے والے پاکستانی بیٹر بن گئے ،اس سے قبل یونس خان نے 2015 میں سری لنکا کیخلاف 171 رنز بنائے تھے ،بابراعظم بطور کپتان چوتھی اننگز میں سب سے زیادہ رنز بنانے والے دنیا کے پہلے کھلاڑی بن گئے ۔محمد رضوان کی آسٹریلیا کیخلاف شاندار سنچری سکور کی ،محمد رضوان ٹیسٹ کرکٹ میں سنچری بنانے والے دوسرے پاکستانی وکٹ کیپر بن گئے۔

یہ بھی پڑھیے :

Back to top button