تازہ ترینعلاقائی

و زیرداخلہ جس روزکہتے ہیں دھماکہ ہوجاتا ہے،مولانا احمد لدھیانوی

toba tek singٹوبہ ٹیک سنگھ (نامہ نگار) اہل سنت والجماعت کے سربراہ مولانا محمد احمد لدھیانوی نے کہا ہے کہ وفا قی وزیرداخلہ جس روز کہہ دیتے ہیں کہ دھماکہ ہوگا،اگلے روز ہی دھماکہ ہوجاتا ہے،نہ جانے کس بناء پر ایسے وزیرداخلہ کو رکھا ہوا ہے،ان خیالات کا اظہار اہل سنت والجماعت کے سربراہ مولانا محمد احمد لدھیانوی نے ضلعی راہنما مولانا محمد اویس کی بہن کے انتقال پر تعزیت کے بعد صحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے کیا،اس موقع پر اہل سنت والجماعت کے ضلعی جنرل سیکرٹری محمد عرفان اظہر نازسمیت کارکنوں کی کثیر تعداد موجود تھی،مولانا محمد احمد لدھیانوی نے کہا کہ گزشتہ دنوں اسلام آباد میں ہونے والی آل پارٹیز کانفرنس کی افادیت ختم کرنے کیلئے کراچی میں دھماکہ کیا گیا،کتنے افسوس کا مقام ہے کہ وزیرداخلہ کو دہشت گردی کا تو پتہ چل جاتا ہے کہ ہونے والی ہے مگر یہ پتہ نہیں چلتا کہ دہشت گردی کون کرتا ہے،حکومت کے خاتمے میں صرف چند روز باقی ہیں اور حکومت اپنی کوتاہیاں کسی دوسرے کے کھاتے میں ڈالنے کی ناکام کوشش کر رہی ہے،حکومت کے خاتمہ کے قریب ہمارے بے گناہ کارکنوں کو گرفتار کرکے جیلوں میں بھیجا جارہا ہے جو زیادتی کی انتہاء ہے،اگر اہل سنت والجماعت پر دہشت گردی ثابت ہوجائے تو ہر قسم کی سزا کیلئے تیار ہوں مگر حکومت اپنی ناکامی چھپانے کیلئے آئے روز طرح طرح کے بیانات داغ رہی ہے،انہوں نے کہا کہ کالعدم مذہبی تنظیموں کی آڑ میں ملک دشمن بل اسمبلی میں پیش کرکے پاس کروانے کی کوشش کی جارہی ہے اگر وہ بل پاس ہوگیا تو پھر اس کی آڑ میں جس کو جی چاہے گا حکومت اپنے انتقام کا نشانہ بنائے گی،انہوں نے کہا کہ یہ کیسی حکومت ہے کہ ملک کا وزیراعظم پٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں کمی کا اعلان کرتے ہیں مگر نہ ہی اس کا نوٹیفکیشن کیا جاتا ہے اور نہ ہی اپنے حکم پر عملدرآمد کروایا جاتا ہے حکومت جاتے جاتے شہریوں پر ایک اور پٹرول بم گرانا چاہتی ہے،انہوں نے کہا کہ اگرکارکنوں کی پکڑ دھکڑ کا سلسلہ بند نہ کیا گیا تو آئندہ انتخابات کے موقع پر پاکستان پیپلز پارٹی اور پاکستان مسلم لیگ (ن) کا سیاسی بنیادوں پر راستہ روکیں گے،انہوں نے کہا کہ ہم مطالبہ کرتے ہیں فضل الرحمن کی سربراہی میں بننے والی آل پارٹیز کانفرنس کی سفارشات کی روشنی میں دہشت گردی کے خلاف بیانات کی بجائے ٹھوس بنیادوں پر عملدرآمد کرکے دہشت گردی کا خاتمہ کیا جائے،ایک سوال کے جواب میں مولانا محمد احمد لدھیانوی نے کہا کہ میں بھی ایک کارکن ہوں اور کارکنوں کے دفاع کیلئے کسی قسم کی قربانی دے دریغ نہیں کروں گا،مخالفین جھوٹی افواہیں پھیلا رہے ہیں میں تو اس وقت بھی گرفتار تھا جب میری بیٹی کی شادی تھی اور اپنی بیٹی کی شادی کی تقریب میں بھی جیل سے شرکت کی تھی،مگر یہ جیلیں،ظلم و تشدد ہمارا راستہ نہیں روک سکتیں ہم صحابہ کے دفاع کیلئے ہر قسم کی قربانی دینے کیلئے تیار ہیں۔

یہ بھی پڑھیے :

Back to top button