پاکستانتازہ ترین

تمباکونوشی کیخلاف”ورلڈ نو ٹوبیکو ڈے“آج منایاجارہا ہے

لاہور(نمائندہ خصوصی) دنیا بھر میں آج سگریٹ نوشی کے خلاف عالمی دن منایا جا رہا ہے۔ سگریٹ کی ڈبی پر یہ تو ضرور لکھا ہوتا ہے کہ سگریٹ نوشی مضر صحت ہے لیکن مجال ہے کبھی پبلک پلیس پرسگریٹ نوشی کے خلاف قانون پر عمل ہوا ہو۔ پاکستان میں ہر سال ایک لاکھ سے زائد افراد تمباکو نوشی سے کسی نہ کسی بیماری کا شکار ہوجاتے ہیں۔ سگریٹ نوش تو اس زہر کو بخوشی اپنے جسم میں اتار رہا ہے لیکن اس کے اردگرد موجود افراد زبردستی اس زہر کا شکار ہورہے ہیں۔ سگریٹ نہ پینے والے افراد کچھ لوگ غم غلط کرنے اور ذہنی پریشانیاں دور کرنے کے لیے سگریٹ نوشی کا سہارہ لیتے ہیں۔سگریٹ نوش منہ، حلق اور پھیپھڑوں کا 90 فیصد سرطان تمباکو نوشی کی وجہ سے پھیلتا ہے۔دلچسپ بات یہ ہے کہ تعلیم سگریٹ نوش کا کچھ نہیں بگاڑتی کیونکہ تمباکو نوشی کرنے والے 60 فیصد تعلیم یافتہ افراد ہیں۔ تمباکو نوشی کے خلاف معاشرے کے تمام طبقوں کو مشترکہ طور پر ایک ایسی بھر پور مہم چلانے کی ضرورت ہے جو خصوصاََ ہماری نوجوان نسل میں آگہی پیدا کرسکے کیونکہ تمباکو نوش کی تربیت کرنا صرف حکومت کے بس کی بات نظرنہیں آتی۔

یہ بھی پڑھیں  سی پیک: وزیراعظم نے سوراب، ہوشاب شاہراہ کے منصوبے کا افتتاح کر دیا

یہ بھی پڑھیے :

Back to top button

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker