تازہ ترینحکیم کرامت علیکالم

یونیورسل بدمعاش اور مسلمان

آج ہر سو چرچا ہے کہ مسلمان دہشت گرد ہیں ۔اور یہ واویلا کرنے والے غیر مسلم ہیں ۔موجودہ دور میں دہشت گردی کے نام سے غیر مسلموں خصوصاّّامریکہ نے بڑی مہم چلا رکھی ہے اور اس کا نشانہ کبھی افغانستان کبھی عراق اور کسی حد تک پاکستان بھی بن رہا ہے ۔ جبکہ حقیقت یہ ہے کہ سب سے زیادہ دہشت گردی امریکہ خود کر رہا ہے ۔کشمیر چیچنیا اور فلسطین برما میں زمین روزانہ خونِ مسلم سے سرخ ہو رہی ہے ۔اس کے ساتھ ساتھ یہ بھی شور مچا ہوا ہے کہ اسلام دہشت گرد مذہب ہے ۔ جس کا نام ہی اسلام ہے سلامتی والا امن والا وہ دہشت والا کیسے ہو سکتا ہے ۔عالمی دہشت گرد دوسروں کو دہشت گرد کہ رہا ہے اور اسی نام سے مسلمانوں کا خون بھی بہا رہا ہے ،،اُلٹا چور کوتوال کو ڈانٹے،،اسلام تو امن کا پیغام لے کر آیا ہے ۔بھائی چارے کا صرف پیغام ہی نہیں بلکہ عملی طور پر مہاجرین اور انصار میں عملی بھائی چارہ قائم کر کے دکھا دیا جس کی مثال کائنات میں نہیں ملتی۔موجودہ دور میں مخالفت کرنے والے مسلمانوں کو دہشت گرد کہنے والے۔خود دہشت گرد ہیں ۔آئے دن مسلمانوں کو ذہنی اذیت میں مبتلا کیا جا تا ہے ۔کبھی خاکے بنا کر کبھی کسی قسم کی اور گستاخیاں کر کے ۔ نفسیاتی طور پر مسلمانوں کو مذہبی چو ٹیں لگا کر ذہنی اذیت میں مبتلا کرتے ہیں ۔فلسطین کشمیر چیچنیا عراق برما میں مسلمانوں پر ظلم کی انتہا کی گئی کیا وہ مسلمانوں نے کی ؟چھوٹے چھوٹے بچوں پر تم نے اپنی بہادری کے جوہر دکھائے ،،واہ رے امریکہ بہادر تیری بہادری ،یا، بے غیرتی کی بھی مثال نہیں ،،معصوم بچوں پر اپنی بہادری کے جوہر دکھاتا ہے ۔اور اسلام دورانِ جنگ بھی بچوں عورتوں اور بوڑھوں کو مارنے سے منع کرتا ہے ۔یہ سب ظلم اسرائیل اور بھارت جو سب سے بڑے دہشت گرد ہیں وہ کر رہے ہیں اور ان کا سر پرستِ اعلیٰ ،رائس البغیرتین امیر الجاہلین سید الفاسقین شیخ المنافقین امریکہ ہے ۔مسلمان نہیں افغانستان میں ہزاروں بے گناہ مسلمانوں کس خون بہایا گیا اور عراق پر اقوام متحدہ کی مخالفت کے باوجود حملہ کیا گیا جس میں ہزاروں عراقی قتل کر دیے گئے 1991 میں دو لاکھ عراقی مار دیے گے ۴ ہزار عراقی مسلمان عورتوں کے ساتھ زنا بالجبر کیا گیا ابھی تک عراق میں خون کی حولی کھیلی جا رہی ہے ۔یہ دہشت گردی کرنے ولا بے غیرت امریکہ ہی ہے ۔جنگِ عظیم اول دوم میں کروڑوں مسلمانوں کا خون کس نے بہایا؟جاپان پر ایٹم بم چلانے کا تجربہ کس نے کیا ۔
دہشت گردی کے خاتمے کے نام پر جتنی بھی کاروائیاں کی گی وہ سب کسی نہ کسی مسلم ممالک میں کی گئی۔کسی غیر مسلم ملک سے ایک بھی دہشت گرد کا تصور تک نہیں ۔اس سے یہ ثابت کرنا چاہتے ہیں کہ مسلمان دہشت گرد ہیں (کاش سارے مسلمان دہشت گرد ہوتے اور ان کی دہشت امریکیوں کے دل و دماغ میں بیٹھی ہوئی ہوتی پھر یہ ایسی حرکتیں نہ کرتا )پوری دنیا میں یہ بدمعاش مسلمانوں کو طرح طرح سے اذیتیں دے رہا ہے اور اپنا دامن بھی بچا رہا ہے ۔اور ہمارے حکمرانوں نے آنکھوں پر پٹیاں باندھی ہوئیں ہیں ۔مسلم کمانڈر نیک محمد کو میزائل سے شہید کر دیا گیا ۔ایمل کانسی کو تختہ دار پر لٹکا دیا گیا ۔ڈاکٹر عافیہ صدیقی کے ساتھ ظلم کی انتہا ہو رہی ہے ۔کسی نے پوچھا تک نہیں ۔ڈالروں کی چھاوں تلے بیٹھے حکمران یہ تماشا ایک تفریح کی طرح دیکھ رہے ہیں ۔وہ ریمیڈ ڈیوس کو نکال کر لے گے اور ہم دیکھتے رہ گے ۔اتنی دہشت گردی اور مدمعاشی کرنے کے باوجود بھی وہ سفید پوش ۔یہ کشش ڈالروں کی ہے جس نے ہمارے حکمرانوں کے منہ بند کر رکھے ہیں ۔اور ان کو یہ حکمران پالن ہار سمجھ بیٹھے۔مسلمان جتنے بھی مارے جائیں کوئی پرواہ نہیں ۔ان کا کتا بھی مر جائے تو دنیا میں ایک زلزلہ برپا ہو جاتا ہے ۔
کتوں سے یاد آ گیا کہ میں نے اپنے پچھلے ایک کالم میں لکھا تھا کہ یہ وہ قوم ہے جن کے بچے اور بوڑھے تو سنٹروں میں پلتے ہیں اور کتے ان کی گودوں میں ۔اسی بات سے اس بد تمیز ،،یا ،،بد تہذیب ،، قوم کی ذہانت کا اندازاہ لگایا جا سکتا ہے ۔ کہ ان کے نذدیک انسانیت کی اہمیت کیا ہے ۔اس لیے کہوں گا کہ ۔۔۔۔ ہم آہ بھی کرتے ہیں تو ہو جاتے ہیں بدنام ۔۔۔۔وہ قتل بھی کر دیں تو چرچا نہیں ہوتا ۔۔۔
ان کی ہٹ دھرمی دیکھو کہ دنیا کے سامنے پھر بھی سچے اور امن کا نعرہ بلند کرنے والے۔امن کا یہ ٹھیکدار پوری دنیا کا امن تباہ کر رہا ہے ۔
بقول غالب ۔۔۔۔۔۔۔ ڈھیٹ اور بے شرم بھی ہوتے ہیں اکثر عالم۔۔۔۔ سب پر سبقت لے گئی بے حیائی آپ کی

یہ بھی پڑھیں  پزویز مشرف پرغداری کا مقدمہ یابحرانوں سے توجہ ہٹانے کی کوشش

یہ بھی پڑھیے :

Back to top button

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker