احمد رضا میاںتازہ ترینکالم

وینا ملک ۔۔۔اور ماہ رمضان المبارک!!!

جب رحمتوں برکتوں اور مغفرتوں کے مقدس مہینے رمضان المبارک کی آمد آمد ہوتی ہے تو ہر مسلمان اس مہینے کی رحمتوں اور برکتوں کو سمیٹنے کی بھر پور تیاریوں میں مصروف ہو جاتا ہے اور ہر مسلمان اپنے رب کی طرف سے مغفرت کا طلبگار ہوتا ہے۔مسجدوں کی رونقیں کئی گناہ بڑھ جاتی ہیں اور حفاظ کرام کی سریلی آوازیں ہر سننے والے کو اپنے سحر میں جگڑ لیتی ہیں۔بچے جوان بوڑھے سبھی ایک دوسرے سے بڑھ کر نیکیاں سمیٹنے کی کوشش کرتے ہیں۔سحری اور افطاری کا منظر بھی بڑا دلربا ہوتا ہے۔ گلیوں او ربازاروں کی رونق بھی دیکھنے سے تعلق رکھتی ہیں۔ ٹیلی ویژن چینلز بھی اس کار خیر میں اپنا حصہ ضرور ڈالتے ہیں۔مختلف قسم کے پروگرام ترتیب دیئے جاتے ہیں۔ خاص طور پر سحر اور افطار کے موقع پر جو کہ رات گئے تک جاری رہتے ہیں۔ہر مکتبہ فکر کے علمائ کرام ٹاک شوز میں مدعو کیئے جاتے ہیںاُن سے روضے کی اہمیت فوائد اور ضرورت کے بارے میں اُن کے خیالات جانے جاتے ہیں۔نعت خوانوں کی ٹولیاں بھی نعتیں سُنا سُنا کر روضہ داروں کے دلوں میں محبت رسول ö بڑھاتی ہیں۔ غرض کہ جس کسی کو بھی جتنا موقع ملتا ہے وہ اپنی استطاعت کے مطابق اپنے رب کو اور اپنے پیارے نبی ö کو راضی کرنے کی کوشش کرتا ہوا نظر آتا ہے۔اس بار بھی رمضان المبارک کے با برکت مہینے کے سلسے میں تقریباً تمام ٹی وی چینلز اپنی اپنی رمضان اسپیشل ٹرانسمیشن نشر کریں گے ۔ اسی رمضان اسپیشل ٹرانسمیشن کے سلسلے میں ایک نجی ٹی وی چینل کی طرف سے ایک پرومو چل رہی ہے جس میں ایک بدنام زمانہ پاکستانی ادا کارہ جس نے ہندوستان جا کر فحاشی اور عریانی کے سارے ریکارڈ توڑ دیئے تھے اور پوری دنیا میں پاکستان کا سر شرم سے جھکا دیا تھا ۔ ۔۔ وینا ملک۔۔۔ جی ہاں جس کا نام وینا ملک ہے۔وینا ملک آ رہی ہے رمضان اسپیشل ٹرانسمیشن میں ایک نئے روپ میں ایک نئے انداز میں ۔ مسلمانوں کے دلوں کو گرمانے اور روضہ داروں کے دلوں کو دھڑکانے۔۔۔ وہ بتائے گی کہ روضے کی کیا اہمیت ہے۔ وہ بتائے گی کہ شیطان سے اپنے آپ کو کیسے محفوظ رکھنا ہے۔ وہ بتائے گی کہ نفس کو کیسے قابو میں رکھنا ہے۔ وہ یہ بھی بتائے گی کہ روضہ رکھ کر ایک روضہ دار کوکن کن باتوں سے پرہیز کرنا ہے اور کن کن چیزوں سے دور رہنا ہے۔۔۔۔ جی ہاں ۔۔۔ وینا ملک ۔۔۔ وینا ملک آپ کو بتائے گی کہ روضہ کب شروع ہوتا ہے اور کب ختم۔وہ ٹین کا پیپا لے کر گلیوں میں نکلے گی اور پیپا بجا بجا کر سوئے ہوئے مسلمانوں کو بیدار کرے گی۔وہ خود روضے رکھے یا نہ رکھے لیکن اپنے مداحوں کو روضے رکھنے پر ضرور مجبور کر دے گی۔۔۔
یہ تو اللہ تعالیٰ کی رحمت ہے جس پر چاہے برس پڑے جس کو میرا رب چاہے اپنے گناہوں کی معافی مانگنے کی توفیق عطا فرما دے یہ تو اُس کی رحمت ہے جس کی نہ تو کوئی حد ہے اور نہ ہی کوئی مخصوص وقت۔ اُس کی رحمت تو خود اپنے گناہ گار بندوں کو پکارتی ہے کہ آئو میرے دربار میں آ کر اپنے گناہوں کی معافی مانگ لو ۔۔۔لیکن یہ معافی اُسی صورت میں ہی ملتی ہے جب انسان اپنی آئندہ زندگی کے لیئے بھی گناہوں سے باز رہے۔اس بات کی گارنٹی کون دے گا کہ وینا ملک ایک بار اپنے گناہوں کی معافی مانگ کر شو بز کی دنیا کو خیر باد کہہ دے گی اور پھر سے اپنی اوقات میں نہ آ جائے گی اور کپڑوں سے آزاد ہو کر اپنے بازو پر ایک نیا ٹیٹو بنوا کر مختلف پوز بنا تے ہوئے کسی انڈین میگزین کی زینت نہ بن جائے گی۔۔۔چلو مان لیا کہ وہ اپنے گناہوں سے استغفار کر لیتی ہے لیکن کوئی دین کی عالمہ تو نہیں بن جائے گی نا۔اگر دیکھا جائے تو یہ سرا سر اسلام کو بدنام کرنے کی ایک سازش ہے۔ ورنہ جو کام ایک عالم دین یا مذہب کے بارے میں علم رکھنے والے شخص کا ہو وہ ایک فاحشہ اور بدنام زمانہ اداکارہ کیسے سر انجام دے سکتی ہے۔ جس نے اپنے والدین کو ناراض کر دیا ہو وہ اپنے رب کو کیسے راضی کر سکتی ہے۔

یہ بھی پڑھیں  دُعائیں کیوں رد ہوتی ہیں؟

یہ بھی پڑھیے :

Back to top button
Close

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker