تازہ ترینعلاقائی

ضلع وہاڑی میں غیر قانونی پیٹرول پمپ اور آئل ایجنسیوں کے خلاف کریک ڈاؤن کا فیصلہ

وہاڑی (نامہ نگار) ضلع وہاڑی میں غیر قانونی پیٹرول پمپ اور آئل ایجنسیوں کے خلاف کریک ڈاؤن کا فیصلہ کیا گیا ہے پہلے مرحلے میں تینوں تحصیل ہیڈ کوارٹرز وہاڑی، میلسی اور بوریوالا شہروں میں آپریشن کیا جائے گا اس سلسلے میں ڈپٹی کمشنر علی اکبر بھٹی کی صدارت میں اجلاس منعقد ہوا جس میں ضلعی انتظامیہ ، میونسپل کمیٹیوں ، پولیس اور حساس اداروں کے افسران، آئل ڈپو انچارج، بار ایسوسی ایشن کے صدر، انجمن تاجران کے صدر شریک ہوئے اجلاس میں فیصلہ کیا گیا کہ ابتدائی مرحلہ میں شہری علاقوں میں غیر قانونی پیٹرول پمپ اور آئل ایجنسیوں کے خلاف آپریشن ہو گا دوسرے مرحلے میں دیہی علاقوں تک آپریشن کا دائرہ کار بڑھایا جائے گا آپریشن میں متعلقہ اسسٹنٹ کمشنر، ایس ڈی پی او، سول ڈیفنس افسر، متعلقہ میونسپل کمیٹی کے چیف آفیسرز حصہ لیں گے غیر قانونی آئل ایجنسیوں اور پیٹرول پمپوں کی تنصیبات کو مشینری کے ذریعے اکھاڑ دیا جائے گا اس سلسلے میں تمام اداروں کو ضروری اقدامات کی ہدایت کرتے ہوئے مکمل تیاری کا کہا گیا ہے ڈپٹی کمشنر علی اکبر بھٹی نے متعلقہ افسران کو ہدایت کی ہے کہ وہ کسی قسم کی سفارش یا دباؤ کو خاطر میں لائے بغیر آپریشن کریں اجلاس میں وہاڑی شہر کے وسط میں قائم شیل اور پی ایس او آئل ڈپوؤں کی منتقلی کے حوالہ سے ضلعی انتظامیہ ی طرف سے جاری کئے گئے نوٹس پر ڈپو انتظامیہ کے رد عمل کا بھی جائزہ لیا گیا اور ڈپو انچارج کی طرف سے مؤثر اقدامات نہ کرنے پر تعجب کا اظہار کرتے ہوئے کہاگیا کہ کیا ڈپوؤں کی منتقلی کے لیے خدانخواستہ کسی حادثہ کا انتظار کیا جا رہا ہے؟ ڈپٹی کمشنر علی اکبر بھٹی نے بتایا کہ وفاقی سیکرٹری پیٹرولیم کو بھی ڈپوؤں کی گنجان شہری آبادی میں موجود گی سے پیدا ہونے والی صورتحال کی سنگینی سے آگاہ کیا جا چکا ہے اور پنجاب حکومت کو بھی ڈپوؤں کی موجودگی کی وجہ سے شہریوں کی جان و مال کو درپیش خطرات سے آگاہ کر دیا ہے تاکہ اس حساس مسئلہ کے انسداد کے لیے فوری اقدامات کئے جائیں

یہ بھی پڑھیے :

Back to top button
Close

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker