تازہ ترینعلاقائی

بھائی پھیرو:وزیر اعلیٰ کےاعلانات کے باوجود مزدوروں کو اُن کا حق نہ مل سکا

بھائی پھیرو(نامہ نگار)وزیر اعلیٰ پنجاب کے اعلانات کے باوجود مزدوروں کو اُن کا حق نہ مل سکا،وارد موبائل کمپنی کے ٹاوروں پر رکھے جانے والے چوکیداروں کو بارہ گھنٹے ڈیوٹی کرنے پر ماہانہ 4400روپے تنخواہ، بھائی پھیرو وارد کمپنی کے ٹاور کی حفاظت پر معمور چوکیداروں کے بیوی بچے فاقہ کشی پر مجبور، چوکیداروں کی تنخواہیں نہ بڑھانے کی صورت میں ٹاور پر چڑھ کر خود کشی کرنے کی دھمکیاں۔تفصیلات کے ۔بھائی پھیرو وارد موبائل کمپنی کے ٹاوروں کی حفاظت کے لیے رکھے جانے چوکیداروں نے کمپنی پر الزام عائد کرتے ہوئے کہا ہے کہ ہم یہاں بارہ گھنٹے ڈیوٹی دیتے ہیں اور ہمیں تنخواہ صرف 4400روپے ماہانہ دی جاتی ہے جبکہ یہاں ٹاور میں نہ تو بیٹھنے کا کوئی بندوبست ہے اور نہ ہی کمپنی نے یہاں واش روم بنایا ہواہے لیکن اس کے باوجود اس مہنگائی کے دور میں غربت کے ہاتھوں تنگ آکر اتنی کم تنخواہ پر گزارہ کر رہے ہیں جو کہ اونٹ کے منہ میں زیرا کے برابر ہے مزید انہوں نے کہا کہ اگر ہمیں وزیراعلیٰ پنجاب کے اعلان کے مطابق تنخواہ ادا نہ کی گئی تو ہم اسی ٹاور پر چڑھ کر خود کشی کرلیں گے جس کی تما تر ذمہ داری وارد کمپنی پر ہوگی

یہ بھی پڑھیں  غربت اورامیری کاپیرہن

یہ بھی پڑھیے :

Back to top button

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker