پاکستانتازہ ترین

آندھی اور طوفان سے 15 افراد جاں بحق، 100 سے زائد زخمی

لاہور(مانیٹرنگ سیل)خیبر پختونخوا، پنجاب اور بلوچستان کے کئی علاقوں میں تیز آندھی، بارش اور ژالہ باری سے تباہی مچ گئی، دیواریں اور درخت گرنے سے پانچ بچوں اور چھ عورتوں سمیت 15 افراد جاں بحق اور ساٹھ خواتین سمیت سو سے زائد افراد زخمی ہوگئے۔ آندھی کا سلسلہ خیبر پختونخوا سے شروع ہوا۔ پشاور اور اس کے گردو نواح میں دوپہر کو تیز آندھی آئی۔ آندھی کی رفتار 90 کلومیٹر فی گھنٹہ تھی۔ دیواریں، درخت اور سائن بورڈ گرنے سے 2 بچوں سمیت 4 افراد جاں بحق ہو گئے جبکہ 30 سے زائد افراد زخمی ہوئے۔ پنجاب میں آندھی کا سلسلہ سہ پہر سے شروع ہوا۔ سب سے تیز آندھی فیصل آباد میں آئی۔ سہ پہر کے بعد گرد و غبار کے طوفان کے باعث سورج چھپ گیا۔ اندھیرا چھانے کے باعث گاڑیوں کو لائٹیں جلانا پڑیں۔ درخت اور بورڈ گرنے سے 3 افراد زخمی ہوگئے۔ آندھی نے ضلع شیخو پورہ میں تباہی مچا دی۔ فیروز والہ کی شیر بنگال کالونی میں دیوار گرنے سے 2 بچے جاں بحق جبکہ 5 افراد شدید زخمی ہوگئے۔ مرید کے میں ٹیکسٹائل مل کی دیوار گرنے سے 6 خواتین جاں بحق جبکہ 48 زخمی ہوگئیں۔ فاروق آباد میں دیوار گرنے سے 1 بچی جاں بحق جبکہ دوسری زخمی ہوگئی۔ میانوالی کے نواحی علاقے سوانس میں مکان پر آسمانی بجلی گرنے سے ایک شخص زخمی ہوگیا۔ لاہور کے کئی علاقوں میں سہ پہر کو گرد آلود ہوائیں چلیں اور کچھ علاقوں میں بوندا باندی ہوئی۔ ملتان میں تیز گرد آلود آندھی چلنے سے مواصلات اور بجلی کا نظام درہم برہم ہو کر رہ گیا جبکہ آم کے باغات بھی شدید متاثر ہوئے۔ گرد آلود آندھی چلنے سے سڑکوں پر اندھیرا چھا گیا۔ مظفر گڑھ میں آندھی کے بعد بارش ہوئی اور اولے بھی پڑے۔ ڈیرہ اسماعیل خا ن، ٹانک، بہاولپور، سرگودھا، پھالیہ اور کوئٹہ میں بھی آندھی سے نظام زندگی معطل ہو کر رہ گیا۔

یہ بھی پڑھیے :

Back to top button
Close

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker