پاکستانتازہ ترین

ینگ ڈاکٹرز ہفتے سے ڈیوٹی انجام دیں، لاہورہائی کورٹ کا حکم

لاہور (نمائندہ خصوصی) ہائی کورٹ نے ینگ ڈاکٹرز کو ہفتے کی صبح نو بجے تک اسپتالوں میں ایمرجنسی سروس شروع کرنے کا حکم دیتے ہوئے پنجاب حکومت کو ہدایت کی ہے کہ ڈیوٹی پر آنے والے ڈاکٹروں کو ہراساں یا گرفتار نہ کیا جائے۔عدالتی سماعت کے موقع پرینگ ڈاکٹرز پنجاب کے ترجمان عامر بندیشہ اور پی ایم اے کے عہدیدار عدالت میں پیش ہوئے۔ سرکاری وکیل نے عدالت کو بتایا کہ ڈاکٹروں کی بے حسی کی وجہ سے اب تک بیس مریض جاں بحق ہو گئے جس کی وجہ سے حکومت کو عوامی دباو کا سامنا ہے۔ درخواست گزار اظہر صدیق نے دلائل دیتے ہوئے کہا کہ ڈاکٹروں کو اپنے حقوق کے لئے کسی دوسرے کے بنیادی حق کو سلب کرنے کی اجازت نہیں دی جاسکتی۔ جس پر لاہور ہائیکورٹ کے جسٹس اعجاز الاحسن نے اپنے ریمارکس دیتے ہوئے کہا کہ جو بھی قانون کو ہاتھ میں لے گا اس کے خلاف کاروائی کی جائے گی، ڈاکٹر سپریم کورٹ کے احکامات کے باوجود کیسے ہڑتال کررہے ہیں۔عدالت نے اپنے ریمارکس دیتے ہوئے مزید کہا کہ عدالتیں نظام چلانے کے لئے بیٹھی ہیں ہماری نظر میں ڈاکٹر اور مریض برابر ہیں کسی بھی مریض کو بے سہارا نہیں چھوڑا جا سکتا۔ معاملے کو حل ہونا چاہئیے ڈیڈ لاک نہیں آنا چاہئیے۔

یہ بھی پڑھیں  پنجاب میں بھی نیب متحرک!

یہ بھی پڑھیے :

Back to top button

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker