پاکستانتازہ ترین

غیراعلانیہ لوڈشیڈنگ، صدرزداری کی صدارت میں ہنگامی اجلاس،نوید قمر کی سرزنش

اسلام آباد﴿بیوروچیف﴾ صدر آصف علی زرداری نے ملک میں جاری غیر اعلانیہ لوڈشیڈنگ شدید برہمی کا اظہار کرتے ہوئے سخت وارننگ دی ہے کہ 24 گھنٹوں کے اندر متعلقہ حکام اقدامات کر کے عوام کو لوڈشیڈنگ سے ریلیف فراہم کریں صدر نے ہدایت کی متعلقہ حکام  روز مرہ بنیادوں پر انہیں توانائی کی صورت حال سے آگاہ کریں۔ صدر نے ہدایت کی کہ وزارت پانی و بجلی میں سنٹرل کنٹرول روم تشکیل دیا جائے جو غیر اعلانیہ لوڈشیڈنگ کے خاتمے کے لئے کام کرے۔ صدر آصف علی زرداری نے آئل اینڈ گیس کے  متعلقہ افراد کو بھی اگلے ہفتے تک اسلام آباد میں رہنے کی ہدایت کی ہے تاکہ وہ روز اجلاس کر کے  توانائی کی صورتحال کا جائزہ لیں ۔ ملک میں بجلی کے فقدان اور توانائی کے بحران کے حوالے سے ہنگامی اجلاس ایوان صدر میں آصف علی زرداری کے زیر صدارت ہوا‘ اجلاس میں وفاقی وزیر پٹرولیم ڈاکٹر عاصم حسین ‘ وفاقی وزیر پانی و بجلی سید نوید قمر ‘ وزارت پانی وبجلی ‘ خزانہ اور پٹرولیم کے وفاقی سیکرٹریز ‘ ایم ڈی پیپکو رسول خان مشود‘ ایم ڈی ایس این جی پی ایل عارف حمید ‘ ایم ڈی ایس ایس جی سی ایل عظیم اقبال صدیقی اور سابق چیئرمین آپٹما گوہر اعجاز نے شرکت کی‘ اجلاس کے آغاز پر ملک میں جاری غیر اعلانیہ لوڈشیڈنگ پر صدر نے اظہار برہمی کیا۔ انہوں نے کہا کہ یہ صورتحال ناقابل برداشت ہے اور متعلقہ ملکی اداروں کو اس پر جواب دینا ہو گا۔ اجلاس میں سید نوید قمر نے جمعرات کے روز ملک کے مختلف حصوں میں بدترین لوڈشیڈنگ کے حوالے سے بریفکنگ دی‘ اجلاس میں ڈاکٹر عاصم حسین نے پاور پلانٹس کو فرنس آئل اور گیس کی فراہمی سے متعلق بریفنگ دی جس پر صدر نے کہا کہ معاملے کے حل کے لئے ہر سطح پر تعاون کی ضرورت ہے اور ہدایت کی کہ آئل‘ گیس اور پاور کے اراکین بجلی کے بحران پر قابو پانے کے لئے اگلے ہفتے تک اسلام آباد میں مقیم رہیں اور صورتحال کے جائزے کے لئے روز مرہ بنیادوں پر اجلاس کریں‘ صدر نے ہدایت کی کہ انہیں رو زمرہ بنیادوں پر بجلی کی صورتحال سے آگاہ کیا جائے۔ انہوں نے کہا کہ بجلی کے خاتمے کے لئے موثر اقدامات کئے جائیں تاکہ غیر اعلانیہ لوڈشیڈنگ نہ ہو اور ساتھ ہی ہدایت کی کہ ضرورت پڑنے پر اس مقصد کے لئے وزارت پانی وبجلی میں سنٹرل کنٹرول روم بھی تشکیل دیا جائے  اجلاس میں ڈاکٹر عاصم حسین کا کہنا تھا کہ بجلی کی پیداوار کے لئے گیس اور تیل کی فراہمی یقینی بنائی جائے گی جس سے جمعہ کے دن سے بجلی کی لوڈشیڈنگ میں کمی آئے گی ۔ اجلاس میں بتایا گیا کہ بجلی کی پیداوار میں اضافے کے لئے  آئندہ ہفتے ٹرم فنانس سرٹیفکیٹ کے 82 ارب ای سی سی کے آئندہ ہفتے اجلاس میں جاری کرنے کا فیصلہ کیا جائے گا جس سے صورتحال بہتر ہو گی صدر نے دوران اجلاس سید نوید قمر کی سخت سر زنش کی اور بجلی بحران پر سخت ناراضگی کا اظہار کیا اور کہا کہ  بحران پر قابو پانے کے لئے مربوط کوششیں کی جائیں۔

یہ بھی پڑھیں  وزیراعظم نااہلی کیس کی سماعت کیلئے لارجر بنچ بنانے کی سفارش

یہ بھی پڑھیے :

Back to top button

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker